مڈ ٹرم انتخابات کے سوا کوئی راستہ نہیں

مڈ ٹرم انتخابات کے سوا کوئی راستہ نہیں
مڈ ٹرم انتخابات کے سوا کوئی راستہ نہیں

  


       لاہور(آئی اےن پی) عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ ملک مےں جمہو رےت کو بچانے کےلئے مڈ ٹرم انتخابات کے سوا کوئی راستہ دکھائی نہےں دےتا‘ویسے بھی ہم کس جمہوریت کو بچانے کی بات کرتے ہیں یہاں تو خاندانی جمہوریت چل رہی ہے‘ تحریک انصاف، عوامی مسلم لیگ، طاہر القادری سمیت ایم کیوایم کو بھی ساتھ ملکر ملک اور جمہوریت کو بچانے کے لئے باہر نکلناہوگا‘ اگر ایم کیوایم اورتحریک انصاف ایک ساتھ مل گئے تو یہ سال فیصلہ کن ہوگا‘سوئس بینکوں کے علاوہ دنیا بھر کے ممالک میں ہمارے ملک کی لوٹی ہوئی دولت پڑی ہے لیکن کسی کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگی۔ اپنے اےک انٹر وےو مےںشےخ رشےد احمد نے کہا کہ اگر مولانا فضل الرحمن وزارتوں کے بجائے عوامی مفاد میں دلچسپی رکھتے ہیں اور عوام کی فلاح وبہبود کے لئے کام کرناچاہتے ہیں تو انہیں بھی پرانی رنجشوں اور تلخیوں کوبھلاتے ہوئے عمران خان کے ساتھ بیٹھناہوگا۔ انہوں نے کہاکہ اگر ماضی میں 1977میں ہونے والے انتخابات میں کی جانے والی دھاندلی کو تسلیم کرتے ہوئے انتخابی بے قاعدگیوں کا جائزہ لیتے ہوئےان تین حلقوں میں دوبارہ انتخابات کا اعلان کردیتے اور اس کے سدباب کا کوئی طریقہ ڈھونڈ لیتے تو اس کا نتیجہ ہمیں آمریت کی صورت میں ہرگز نہیں دیکھنا پڑتا اسی لئے ہم اب بھی یہ چاہتے ہیں کہ ہمارے مطالبات تسلیم کرتے ہوئے انتخابات میں ہونے والی دھاندلی کی شفاف تحقیقات کرائی جائے تاکہ ملک خانہ جنگی سے محفوظ رہے۔انہوں نے کہا کہ ملک میں جمہوریت و جمہوری اداروں کی بقا کے لئے اپوزیشن کی تمام سیاسی جماعتوں کو اکٹھاہوناہوگا‘ اگر ایم کیوایم اورتحریک انصاف ایک ساتھ مل گئے تو یہ سال فیصلہ کن ہوگا

مزید : صفحہ اول


loading...