افواج پاکستان ہر جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کی صلاحیت رکھتی ہیں ،جنرل راحیل

افواج پاکستان ہر جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کی صلاحیت رکھتی ہیں ،جنرل راحیل ...

                        راولپنڈی (آن لائن+ اے این این ) چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف نے کہاہے کہ پاکستان کی مسلح افواج ہر طرح کی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کی صلاحیت رکھتی ہےں، زمانہ امن میں بہترین پیشہ وارانہ تیاری ہی امن کی ضمانت ہے، فوج کی آپریشنل صلاحیتیں برقرار رکھنے اور خطرات کا موثر جواب دینے کیلئے تمام وسائل بروئے لائے جائیں گے۔منگل کو آئی ایس پی آر کی طرف سے جاری بیان کے مطابق آرمی چیف نے ٹلا رینج کا دورہ کیا جہاں انہوں نے سنٹرل کمانڈ کی فارمیشنز کی مشقوں کا جائزہ لیا اور پاک فوج کے جوانوں کی صلاحیتوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ فوج کی آپریشنل صلاحیتیں برقرار رکھنے اور خطرات کا موثر جواب دینے کیلئے تمام وسائل بروئے لائے جائیں گے، مادر وطن کا دفاع ہر صورت میں یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہر خطرے سے نمٹنے کیلئے بھرپور تیاریاں کی جانی چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ پیشہ وارانہ تیاریوں کا اعلیٰ معیار امن کی ضمانت ہے۔ پاکستان کی مسلح افواج ہر قسم کے چیلنجز سے نمٹنے کیلئے تیار ہے اور جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کی صلاحیت رکھتی ہےں۔ انہوں نے کہا کہ زمانہ امن میں بہترین پیشہ وارانہ تیاری ہی امن کی ضمانت ہے ۔جنرل راحیل شریف نے مشقوں میں مصروف فوجی دستوں کی پیشہ وارانہ مہارت کی بھی تعریف کی۔ مشقوں میں پاک فضائیہ کے لڑاکا طیاروں اور جدید توپ خانوں سمیت بڑے ہتھیاروں کے نظام نے حصہ لیا۔ پاک فوج کے جہلم میں بڑے پیمانے پر مشقیں اختتام پذیر ہوئی ہیں۔علا وہ ازےں چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف سے امریکی چیف آف نیول آپریشنز ایڈمرل جوناتھن ولیمز گرینرٹ نے ملاقات کی، جس کے دوران خطے کی مجموعی سیکیورٹی کی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ منگل کو آئی ایس پی آر کے مطابق جی ایچ کیو راولپنڈی میں چیف آف آرمی اسٹاف جنرل راحیل شریف سے امریکی چیف آف نیول آپریشنز ایڈمرل جوناتھن ولیمزگرینرٹ نے ملاقات کی، جس میں خطے کی مجموعی سیکیورٹی کی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ذرائع کے مطابق ملاقات میں خاص طور پر افغانستان سے امریکی افواج کے انخلاءسے پیدا ہونے والی صورتحال زیر بحث آئی۔ جنرل راحیل شریف نے امریکی بحریہ کے سربراہ کو بتایا کہ پاکستان خطہ میں عدم مداخلت کی پالیسی پر کاربند ہے تاہم ہم اپنے مفادات کو کسی صورت نظر انداز نہیں کرسکتے۔

مزید : صفحہ اول


loading...