کراچی امن و امان اجلاس، وزیراعظم کا غیر قانونی سمیں فوری بند کر نے کا حکم، کراچی آپریشن کیلئے قانون نافذ کرنے والے ادارے آزاد ہیں: نواز شریف

کراچی امن و امان اجلاس، وزیراعظم کا غیر قانونی سمیں فوری بند کر نے کا حکم، ...
کراچی امن و امان اجلاس، وزیراعظم کا غیر قانونی سمیں فوری بند کر نے کا حکم، کراچی آپریشن کیلئے قانون نافذ کرنے والے ادارے آزاد ہیں: نواز شریف

  


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم نواز شریف نے غیر قانونی سمیں بند نہ ہونے پر حیرانگی کا اظہار کرتے ہوئے انہیں فوری طور پر بند کرنے کی ہدایت کر دی ہے، ان کا کہنا ہے کہ کراچی میں سیاسی جماعتوں کے تعاون سے آپریشن جاری رہے گا، تمام سیاسی جماعتوں نے ٹارگٹڈ آپریشن میں تعاون کا یقین دلانے کے ساتھ ساتھ تحفظات کا اظہار بھی کیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت گورنر ہاﺅس میں امن وامان پر اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں کراچی میں جاری ٹارگٹڈ آپریشن اور امن وامان کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ جلاس میں گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان، وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ، ڈی جی رینجرز، آئی جی پولیس اقبال محمود، آرمی چیف جنرل راحیل شریف، ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل ظہیر الاسلام، کور کمانڈر کراچی، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثارعلی خان ، ڈی جی آئی بی اور سابق صدر آصف علی زرداری بھی شریک ہوئے۔ رپورٹ کے مطابق اجلاس میں ڈی جی رینجرز، ڈی جی آئی بی، چیف سیکرٹری اور آئی جی سندھ نے وزیراعظم کو شہر میں امن و امان کی صورت حال، دہشت گردوں، ٹارگٹ کلرز اور دیگر جرائم پیشہ افراد کے خلاف جاری ٹارگٹڈ آپریشن پر بریفنگ دی اور انہیں بتایا گیا کہ غیر قانونی سمیں ابھی تک بند نہیں کی گئیں جس پر وزیراعظم نواز شریف نے حیرانگی کا اظہار کیا اور حکم دیا کہ غیر قانونی سموں کو فوری طور پر بند کیا جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں ہر صورت امن قائم کرنا اولین ترجیح ہے، قیام امن کیلئے حکومت سندھ سے مل کر کام کر رہے ہیں، بیرون ملک فرار ہونے والے ملزمان کے فوری طور پر ریڈ وارنٹ جاری کئے جائیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ کراچی میں امن و امان کا قیام اولین ترجیح ہے، قانون نافذ کرنے والے ادارے آزاد ہیں تاہم بنیادی انسانی حقوق کا خیال رکھنا ہو گا، آپریشن پر اگر کسی کو تحفظات ہیں تو اسمبلی کا فلور موجود ہے، ملک سڑکوں پر مظاہروں کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ اجلاس میں تمام سیاسی جماعتوں نے کراچی ٹارگٹڈ آپریشن میں تعاون کا یقین دلایا اور ساتھ ہی ساتھ تحفظات کا اظہار بھی کیا۔ ایم کیو ایم کی جانب سے کارکنوں کے ماورائے عدالت قتل کا معاملہ بھی سامنے رکھا گیا۔

مزید : کراچی /Headlines


loading...