الیکشن کمیشن کے اراکین اخلاقاً مستعفی ہو جائیں: ق لیگ ،تحریک انصاف کی مشترکہ پریس کانفرنس

الیکشن کمیشن کے اراکین اخلاقاً مستعفی ہو جائیں: ق لیگ ،تحریک انصاف کی مشترکہ ...
الیکشن کمیشن کے اراکین اخلاقاً مستعفی ہو جائیں: ق لیگ ،تحریک انصاف کی مشترکہ پریس کانفرنس

  


لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ ق نے تحریک انصاف کے چارٹر آف ڈیمانڈ کی حمایت کر دی ہے جبکہ انتخابی اصلاحات کیلئے دونوں جماعتوں کا مل کر چلنے پر اتفاق ہو گیا ہے، شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کے اراکین اخلاقاً مستعفی ہو جائیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق جاوید ہاشمی اور شاہ محمود قریشی پر مشتمل تحریک انصاف کے وفد نے مسلم لیگ ق کے رہنماﺅں سے ملاقات کی جس میں 11 مئی کے عام انتخابات میں دھاندلی، الیکشن کمیشن کی تشکیل نو اور تحریک انصاف کے چارٹر آف ڈیمانڈ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ مسلم لیگ ق نے تحریک انصاف کے چارٹر آف ڈیمانڈ کی حمایت کا فیصلہ کیا جبکہ الیکشن کمیشن کی تنظیم نو اور انتخابی اصلاحات کیلئے دونوں جماعتوں نے مل پر چلنے پر اتفاق کیا۔ ملاقات میں اتفاق کیا گیا کہ فخرالدین جی ابراہیم کے مستعفی ہونے کے بعد باقی ارکان بھی عہدے چھوڑ دیں، الیکشن کمیشن کے دیگر ارکان کا عہدے برقرار رکھنے کا کوئی جواز نہیں ۔ اس موقع پر چوہدری شجاعت حسین کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن میں دھاندلی پر مسلم لیگ ق کو بھی شدید تحفظات ہیں۔ ملاقات کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے تحریک انصاف کے رہنماءشاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ دونوں جماعتیں اس بات پر متفق ہیں کہ انتخابی اتحاد کی ضرورت ہے تاکہ واقعتا خودمختار اور آزاد الیکشن کمیشن معرض وجود میں آ سکے جس کی نگرانی میں صاف شفاف الیکشن ہوں کیونکہ صاف شفاف الیکشن جمہوریت کیلئے ضروری ہیں۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے میں ناکام رہا، موجودہ الیکشن کمیشن کو مستعفی ہو جانا چاہئے، ملک میں انتخابی اصلاحات کی ضرورت ہے، تحریک انصاف نے مسلم لیگ ق کے سامنے اپنا نقطہ نظر پیش کیا جس کی مسلم لیگ ق نے حمایت کی جبکہ الیکشن کمیشن کے اراکین کے استعفے پر بھی دونوں جماعتوں میں اتفاق رائے ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں جماعتوں میں اس بات پر اتفاق ہوا ہے کہ ان جماعتوں سے رجوع کرنا چاہئے جو اس بات پر قائل ہیں کہ 11 مئی کے انتخابات شفاف نہ تھے اور انتخابی اصلاحات کے ایک نکاتی ایجنڈے پر قومی اتفاق رائے پیدا کرنا چاہتی ہیں تاکہ ایک آزاد الیکشن کمیشن کا قیام ممکن ہو سکے۔ مسلم لیگ ق کے سربراہ چوہدری شجاعت کا کہنا تھا کہ الیکشن جیتنے والے بھی کہہ رہے ہیں کہ دھاندلی ہوئی ہے، الیکشن کمیشن کے ارکان خود ہی مستعفی ہو جائیں۔

مزید : لاہور /اہم خبریں


loading...