شہر قائد میں وائبر، ٹینگو سمیت سوشل میڈیا ایپلی کیشنز پر پابندی کا امکان

شہر قائد میں وائبر، ٹینگو سمیت سوشل میڈیا ایپلی کیشنز پر پابندی کا امکان
شہر قائد میں وائبر، ٹینگو سمیت سوشل میڈیا ایپلی کیشنز پر پابندی کا امکان

  


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) شہر قائد میں امن و امان کے قیام کیلئے غیر قانونی سمیں فوری طور پر بند کرنے کافیصلہ کیا گیا ہے جبکہ سوشل میڈیا ایپلی کیشنز پر بھی پابندی عائد کرنے پر غور کیا جا رہا ہے۔ نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت امن و امان سے متعلق اعلیٰ سطح اجلاس میں سندھ حکومت کی جانب سے ایک بار پھر سوشل میڈیا ایپلی کیشنز، وائبر، واٹس ایپ، ٹینگو، سکائپ وغیرہ پر پابندی عائد کرنے کی بات کی گئی جس پر وزیراعظم نواز شریف نے وفاقی وزیر داخلہ کو متعلقہ ادروں سے رابطہ کرنے اور اس معاملے کو حل کرنے کی ہدایت کی۔ سندھ حکومت نے موقف اختیار کیا کہ کراچی آپریشن کے دوران گرفتار ہونے والے دہشت گردوں نے انکشاف کیا ہے کہ وہ پیغام رسانی کیلئے سوشل میڈیا ایپلی کیشنز استعمال کرتے ہیں جبکہ ٹارگٹ کلنگ سے پہلے ریکی کے دوران بھی انہیں ایپلی کیشنز کے ذریعے تصاویر اور ویڈیوز ایک مقام سے دوسرے مقام پر بھیجی جاتی تھیں۔ وزیراعظم نواز شریف نے وزیر داخلہ کو غیر قانونی سمیں فوری طور پر بند کرنے کی ہدایت کرنے کے ساتھ ساتھ سوشل ایپلی کیشنز کے معاملے کو حل کرنے کی ہدایت بھی کی ہے اور اب کراچی میں سوشل ایپلی کیشنز پر پابندی عائد ہونے کا امکان پیدا ہو گیا ہے۔ وزیراعظم کا کہناتھا کہ وائبر، واٹس ایپ اور دیگر اپیل کیشنز کے خلاف کارروائی ہونی چاہئے اور اس معاملے میں ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کئے جائیں۔ واضح رہے کہ کراچی ٹارگٹڈ آپریشن شروع ہونے کے بعد تقریباً 2 ماہ بعد سندھ حکومت کی جانب سے رپورٹ پیش کی گئی تھی جس میں ٹینگو اور وائبر سمیت دوسری سوشل میڈیا ایپلی کشنز پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا گیا تھا تاہم یہ درخواست مسترد کر دی گئی تھی جس کے بعد سندھ حکومت نے ایک بار پھر درخواست کی تاہم وہ بھی مسترد کر دی گئی تھی۔

مزید : کراچی /اہم خبریں


loading...