پسند کی شادی کرنے والی لڑکی اپنے گھر والوں کے ہاتھوں قتل ، لڑکا روپوش

پسند کی شادی کرنے والی لڑکی اپنے گھر والوں کے ہاتھوں قتل ، لڑکا روپوش
پسند کی شادی کرنے والی لڑکی اپنے گھر والوں کے ہاتھوں قتل ، لڑکا روپوش

  


ساہیوال (مانیٹرنگ ڈیسک )پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کو اس کے اپنے ہی گھر والوں نے قتل کر دیا جبکہ لڑکا خوف کے مارے روپوش ہو گیا ۔ تفصیلات کے مطابق پسند کی شادی کرنے والی کو جان کا خطرہ تھا جس پر عدالت نے اسے دارالامان منتقل کر دیا تھا لیکن اس کے رشتہ داراس کو بہلا پھسلا کر اور تحفظ کی یقین دہانی دلا کر گھر لے آئے اور پھر کلہاڑیوں کے وار کرکے شدید زخمی کر دیا اور  اس پر ہی اکتفا نہیں کیا بلکہ اس پر فائرنگ کردی جس پر وہ موقع پر ہی جاں بحق ہو گئی ۔ لڑکے اور لڑکی کے خاندانوں کے درمیان دیرینہ دشمنی تھی جس پر پنچائت نے پسند کی شادی کرنے والے جوڑے کو طلاق بھی دلوادی تھی جس کے بعد دونوں گھر سے بھاگ گئے اورٹرین میں سوار ہو گئے ۔دونوں گروہوں کے افرادبھی ان کا پیچھا کرتے ہوئے ٹرین میں چڑھ گئے جس پر جوڑے نے چلتی ٹرین سے چھلانگ لگائی دی لیکن دونوں معجزانہ طور پر بچ گئے ۔ لڑکی نے عدالت میں جان سے مارنے کا خطرہ ظاہر کیا تھا جس پر جج نے لڑکی کو دارالامان منتقل کر دیا جہاں صوبائی وزیر طاہر خلیل سندھو نے اس سے ملاقا ت بھی کی تھی اورانصاف کی یقین دہانی کرائی تھی ۔

مزید : ساہیوال


loading...