امریکی شہر ی نے فیس بک کے مالک کا ایک ارب روپیہ ضائع کر دیا

امریکی شہر ی نے فیس بک کے مالک کا ایک ارب روپیہ ضائع کر دیا
امریکی شہر ی نے فیس بک کے مالک کا ایک ارب روپیہ ضائع کر دیا

  


 نیویارک (نیوز ڈیسک) غریب عوام کے نام پر فنڈز اکٹھے کرکے ہڑپ کرجانے یا اپنے عزیز رشتہ داروں کو نوازنے کا فن ہمارے ملک کے رہنماﺅں کی پہچان بن چکا ہے لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ امریکہ جیسے ترقی یافتہ ممالک میں بھی ایسے فنکاروں کی کمی نہیں۔ امریکی ریاست مشی گن کے شہر نُوآرک کے گورنر اور مشیر نے بدامنی اور غیر معیاری تعلیم کے مسئلوں سے دوچار اس شہر کی تقدیر بدلنے کیلئے کروڑوں ڈالر حاصل کئے لیکن بیچارے شہر کے مسائل تو جوں کے توں ہیں لیکن کچھ کاروباری ادارے اور افراد مالا مال ہوگئے ہیں۔ فیس بک کے سی سی او مارک زکربرگ نے اس شہر میں تعلیمی انقلاب لانے کیلئے 10 کروڑ ڈالر کی خطیر رقم دی۔ طے یہ پایا تھا کہ اس کے برابر رقم کا انتظام ریاست کے گورنر کرس کرسٹی اور شہر کے میئر کوری بکر بھی کریں گے۔ ریاست کے گورنر اور شہر کے میئر نے غریب لوگوں کیلئے بہترین تعلیم، قابل ترین اساتذہ کے انتخاب اور طلباءکیلئے سہولیات فراہم کرکے نُوآرک شہر کو تعلیم کے میدان میں ایک روشن مثال بنانے کا خواب دکھا کر بھاری رقوم تو حاصل کرلیں مگر چار سال کا عرصہ گزرنے کے بعد معلوم ہوا ہے کہ اس انقلاب کا کہیں اتا پتا نہیں جس کا وعدہ کیا گیا تھا۔ جبکہ بھاری رقوم پبلک ریلیشن، ہیومن ریسورس، کمیونیکیشن اور ڈینا انیلیسز جیسی مشاورت فراہم کرنے والی کمپنیوں اور افراد کی جیبوں میں جاچکی ہے۔ شہر کے غریب عوام سوال پوچھ رہے ہیں کہ کروڑوں ڈالر خرچ ہوچکے ہیں مگر ان کے بچے ابھی تک الف ب پڑھنے کے بھی قابل نہیں ہوسکے۔

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی


loading...