خاتون جیلر کی قیدیوں سے بھری تقریب میں ایسی شرمناک حرکت کہ پورے ملک کے قیدیوں نے اپنی ٹرانسفر کروانے کی کوششیں شروع کردیں

خاتون جیلر کی قیدیوں سے بھری تقریب میں ایسی شرمناک حرکت کہ پورے ملک کے قیدیوں ...
خاتون جیلر کی قیدیوں سے بھری تقریب میں ایسی شرمناک حرکت کہ پورے ملک کے قیدیوں نے اپنی ٹرانسفر کروانے کی کوششیں شروع کردیں

  

بگوٹا (نیوز ڈیسک) کسی بھی جیل کے سربراہ کی یہ بنیادی ذمہ داری ہوتی ہے کہ وہ قیدیوں کا خیال رکھے لیکن کولمبیا کی ایک جیل کی خاتون سپرنٹنڈنٹ نے قیدیوںکو خوش کرنے کے لئے ایسا کام کردیا کہ پورے ملک میں ہنگامہ برپاہوگیا۔

اخبار ڈیلی سٹار کے مطابق کلاڈیا پیٹریشیا گیرالڈو اوسا ایک خوش شکل خاتون ہیں اور کولمبیا کی ولاہارموسا جیل کی سپرنٹنڈنٹ ہیں۔ جیل میں قیدیوں کی تفریح طبع کے لئے ایک کلچرل تقریب کا اہتمام کیا گیا تھا، جس میں وہ بھی شریک تھیں۔ اس تقریب میں قیدیوں کا جوش و جذبہ اور خوشی دیکھ کر کلاڈیا اوسا بھی بہت خوش تھیں اور جب سینکڑوں قیدیوں نے بیک آواز ہوکر انہیں رقص کرنے کو کہا تو وہ انکار نہ کرسکیں۔ وہ سٹیج پر آئیں اور ایسا فحش رقص کیا کہ ایک بڑا سکینڈل بن گیا۔ مقامی میڈیا کے مطابق کلاڈیا اوسا نے اپنی شرٹ اتار پھینکی اور سینکڑوں قیدیوں کے سامنے شرمناک رقص کرتی رہیں۔ جینز کی تنگ پتلون پہنے ہوئے نیم برہنہ سپرنٹنڈنٹ کا رقص دیکھ کر سارے ملک کے قیدی ولا ہارموسا جیل جانے کے لئے بے تاب ہیں۔

’ہمیں گرفتار کرلو۔۔۔‘ وہ پولیس اہلکار جسے دنیا بھر سے مرد خط لکھنے لگے

کلاڈیا اوسا کے رقص کی تصاویر اور ویڈیوز سامنے آنے پر ان کے خلاف سخت ترین کارروائی کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق انہیں معطل کیا جاچکا ہے اور معاملے کی مزید تحقیقات جاری ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس