اساتذہ کی بھی سُن لیں

اساتذہ کی بھی سُن لیں

پنجاب میں اساتذہ نے سرکاری سکولوں کو نجی شعبہ میں منتقل کر کے پیف کے حوالے کرنے کے خلاف تحریک شروع کر دی ہے۔ اطلاع کے مطابق اساتذہ آج اس فیصلے کے خلاف مظاہرہ بھی کریں گے، صوبائی حکومت نے تعلیم کو عام کرنے اور تدریس کی بہتری کے حوالے سے یہ فیصلہ کیا کہ اچھے انتظامات کے لئے سرکاری سکولوں کو بتدریج نجی شعبہ میں منتقل کیا جائے، اس مقصد کے لئے این جی اوز کا انتخاب کیا گیا اور ان شرائط کے تحت سکول منتقل کرنے کا فیصلہ ہوا کہ اخراجات میں اضافہ نہیں ہو گا اور والدین پر بوجھ نہیں بڑھے گا۔اساتذہ اس فیصلے کے خلاف ہیں کہ ان کو روزگار کا خدشہ ہے کہ یکایک سرکاری ملازمت سے نجی نوکری پر آ جائیں گے اور ان کی مراعات کے ساتھ ساتھ تحفظ ملازمت بھی خطرے میں پڑ جائے گا اب سرکاری سکولوں کی اساتذہ تنظیموں نے اتحاد کر کے مشترکہ طور پر تحریک شروع کر رکھی ہے۔ حال ہی میں ہڑتال اور مظاہروں کا سلسلہ ایک ماہ کے لئے موخر کیا گیا تاہم حکومتی فیصلے میں ردو بدل کی توقع نہ ہونے کے خدشات کی وجہ سے یہ علامتی مظاہرہ کیا جا رہا ہے۔اس فیصلے کی اچھائی یا برائی میں جائے بغیر یہ کہنا تو مناسب ہے کہ حکومت جو بھی فیصلہ کرے اسے اس کے تمام اثرات کا جائزہ بھی لینا چاہئے اور متعلقہ فریقوں کو اعتماد میں بھی، اب اگر یہ فیصلہ حکومت کے نزدیک بہت اچھا ہے اور اساتذہ کی ملازمت اور مراعات بھی متاثر نہیں ہوتیں تو اساتذہ کو اعتماد میں لیا جائے آخر وہ احتجاج پر مجبور ہوئے تو ان کی کچھ جائز شکایات بھی تو ہوں گی۔

مزید : اداریہ