عام آدمی کو بغیر سفارش تھانے آنے کا حوسلہ دئے بغیر تھانہ کلچر تبدیل نہیں کیا جا سکتا :امین وینس

عام آدمی کو بغیر سفارش تھانے آنے کا حوسلہ دئے بغیر تھانہ کلچر تبدیل نہیں کیا ...

لاہور(کرائم رپورٹر)سی سی پی او لاہور کیپٹن (ر) محمد امین وینس نے کہا ہے کہ لاہور میں ایڈمن افسروں کے پراجیکٹ پر شہریوں کے مسلسل اعتماد کی صورت میں حوصلہ افزا نتائج سامنے آنے کے بعد ضلع حافظ آباد کے تمام تھانوں میں بھی اے ایس آئی اور سب انسپکٹر رینک کے پولیس افسروں کو بطور ایڈمن افسرتعینات کرنے کے پراجیکٹ کا ابتدائی طور پر آغاز ہو چکا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ چیف ایڈمن افسر ایس ایس پی سی آئی اے محمد عمر ورک حافظ آباد کے ایڈمن افسروں کو بھی اس پراجیکٹ کے حوالے سے نہ صرف ہفتہ وار بریفنگ دیں گے بلکہ ان کی تربیت بھی کریں گے۔ حافظ آباد سے پولیس لائنز قلعہ گجر سنگھ آنے والے ایڈمن افسروں کو خوش آمدید کہتے ہوئے سی سی پی او نے کہا کہ ایڈمن افسروں کے پراجیکٹ کا مقصد تھانے میں آنے والے شہریوں کے ساتھ خوش اخلاقی کا برتاؤ، ان کے مسائل کو اپنا ذاتی مسئلہ سمجھ کر حل کرنے کی کوشش کرنا اور مسائل کا شکار بے سہارا شہریوں کا سہارا بننا ہی ایڈمن افسروں کی بنیادی ذمہ داری ہے کیونکہ جب تک ہم نے عام آدمی کو بلا جھجک اور بغیر سفارش تھانے آنے کا حوصلہ نہ دیااس وقت تک تھانہ کلچر تبدیل نہیں کیا جا سکتا۔ سی سی پی او نے تھانے کے باہر کسی سفارش کی تلاش میں بیٹھے ضعیف شہری احمد دین کو پیار اور محبت سے اٹھا کر تھانے لانے اور اس کا مسئلہ ذاتی دلچسپی لے کر حل کروانے پر ایڈمن افسر راوی روڈ کی کاوش کو سراہتے ہوئے کہا کہ یہی وہ جذبہ ہے جو تھانہ کلچر میں تبدیلی کا سبب بن رہا ہے اور اگر ہم اپنے فرائض اسی جذبے سے ادا کرتے رہے تو دنیا اور آخرت دونوں میں سرخرو ہوں گے۔ ان خیالات کا اظہاراُنہوں نے پولیس لائنز قلعہ گجر سنگھ میں ایڈمن افسروں کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لیے منعقدہ ہفتہ وار اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیاجس میں ایس ایس پی سی آئی اے محمد عمر ورک ، لاہور کے تمام تھانوں کے ایڈمن افسروں اور حافظ آباد سے تربیت کے لیے آئے ہوئے ایڈمن افسروں کا وفد بھی شریک تھا۔انہوں نے کہا کہ ایڈمن افسروں کا کام عام آدمی کی خدمت اور تھانے میں آنے والے شہریوں سے شائستہ برتاؤ ہی نہیں بلکہ انہیں اپنے ساتھیوں کو کسی بھی طرح کے حالات میں خلاف قانون کام کرنے سے باز رکھتے ہوئے شہریوں کے مسائل حل کرنے کے لیے تمام توانائیاں صرف کرنے کے لیے ہمہ وقت تیار رکھنا ہے۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیف ایڈمن افسر محمد عمر ورک نے کہا کہ لوگوں کے دکھوں کو سکھوں میں تبدیل کرنا اور ان کے مسائل کو اپنے خاندان کا مسئلہ سمجھ کر حل کرنا ہی ہماری اصل ذمہ داری ہے اور اگر ہم اپنے فرائض خوف خدا اور خدمت خلق کے جذبے سے سرشار ہوکر سر انجام دیں تو اپنی دنیا اور آخرت دونوں سنوار سکتے ہیں۔

مزید : علاقائی