راجا ریاض کا تحریک انصاف میں شامل ہونے کا فیصلہ

راجا ریاض کا تحریک انصاف میں شامل ہونے کا فیصلہ

لاہور( نمائندہ خصوصی)پاکستان پیپلز پارٹی کے سابق سینئر صوبائی وزیر راجہ ریاض احمد نے پارٹی میں بڑا عہدہ نہ ملنے اوربلاول بھٹو زرداری کی پھوپھی فریال تالپور سے شکایات کی بناء پرپاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کا فیصلہ کرلیا ہے۔ ذرائع کے مطابق اس سلسلے میں وہ گزشتہ دنوں بنی گالا اسلام آباد میں عمران خان سے ملاقات بھی کر چکے ہیں ۔تحریک انصاف کے ذرائع نے بتایا کہ راجہ ریاض نے تحریک انصاف میں شمولیت کا فیصلہ پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور سے اختلافات کے باعث کیا، وہ طویل عرصے سے صوبے میں کسی بھی قسم کا بڑا عہدہ نہ ملنے پر بھی دلبرداشتہ تھے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ راجہ ریاض احمد اپنے ساتھیوں سمیت تحریک انصاف میں شمولیت کا باقاعدہ اعلان فیصل آباد میں پی ٹی آئی کے جلسے میں کریں گے۔راجہ ریاض کا موقف ہے کہ فریال تالپور پارٹی معاملات چلانے میں مشکلات پیدا کر رہی تھیں اس حوالے سے آصف علی زرداری کی مداخلت کے باوجود معاملات درست نہ ہوئے تو انہوں نے مجبور ہو کر پارٹی چھوڑنے کا فیصلہ کیا۔ راجہ ریاض شریف برادران کے سخت نقاد سمجھے جاتے ہیں انہوں نے 90 کی دہائی میں سیاست میں باقاعدہ حصہ لینا شروع کیا۔بطور قانون ساز 1993 میں پہلی بار رکنِ پنجاب اسمبلی منتخب ہوئے جبکہ صدر فاروق لغاری کی جانب سے پیپلز پارٹی کی وفاقی حکومت کی برطرفی تک صوبائی اسمبلی کے رکن رہے۔دوسری بار وہ 2000 میں رکنِ پنجاب اسمبلی منتخب ہوئے جبکہ 2008 کے انتخابات میں انہیں تیسری بار فیصل آباد کے صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی پی 65 سے کامیابی حاصل ہوئی۔2008 کے انتخابات کے بعد ان کی سیاسی اہمیت میں اضافہ ہوا اور پیپلز پارٹی نے انہیں پنجاب اسمبلی میں اپنا پارلیمانی قائد مقرر کیا۔2011 میں جب پی پی پی نے پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن بنچوں پر بیٹھنے کا فیصلہ کیا تو راجہ ریاض کو پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر بنایا گیا، وہ 2013 تک صوبائی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف بھی رہے۔2013 کے عام انتخابات میں پاکستان پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پر فیصل آباد سے صوبائی اسمبلی کی رکینت کیلئے انتخابات میں ان کو پاکستان مسلم لیگ (ن) کے حاجی محمد الیاس انصاری کے مقابلے میں بہت بڑے مارجن سے شکست ہوئی تھی، پی پی65 پر عام انتخابات میں مسلم لیگ کے حاجی محمد الیاس انصاری کو 64645 ووٹ ملے تھے، راجہ ریاض نے 17571 اور تحریک انصاف کے حماد خان نے 14654 ووٹ حاصل کیے تھے۔دریں اثناء راجا ریاض کی تحریک انصاف میں شمولیت کے فیصلے کے بعد پیپلز پارٹی کے بعض رہنماؤں نے فیصل آباد کی تنظیم کو ہدایت کی ہے کہ راجہ ریاض کی وجہ سے پیپلز پارٹی کو بہت نقصان پہنچا لہٰذا ان کے جماعت چھوڑنے کے فیصلے پر کارکن خوشیاں منائیں۔

مزید : صفحہ اول