پنجاب فوڈ اتھارٹی کی کارروائی، دکانیں اور ہوٹل سربمہر کر دئیے

پنجاب فوڈ اتھارٹی کی کارروائی، دکانیں اور ہوٹل سربمہر کر دئیے

لاہور(کامرس رپورٹر)پنجاب فو ڈ اتھارٹی نے متعددمضر صحت خوراک تیار کر نے والی دکانیں سربمہر اور مضر صحت جو س مو قع پر ضا ئع کر کے مرتکب افراد کے خلاف قانونی کارروائی کی ہے ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روزداتا گنج بخش ٹا ؤ ن کی ٹیم نے اکرم پارک میں لاڈی ہو ٹل او ر رحمت ہو ٹل کوانتہا ئی نا قص صفا ئی ، مکھیو ں کی موجو دگی ، گندے بر تن استعمال کر نے اور بر تن دھو نے کے لیئے صا بن نہ استعما ل کر نے کی بنا پر سر بمہر کر دیا۔ اقبا ل ٹا ؤ ن کی ٹیم نے قہوہ چو ک میں پاکستا ن سو ڈا واٹر کے کا ر خا نے کو فلٹر یشن پلا نٹ نہ ہو نے اور سیمپل فیل ہو نے ، گندی بو تلیں استعما ل کرنے اور نا قص صفا ئی کی بنا پرسربمہر کر دیا۔ شالیما ر ٹا ؤ ن کی ٹیم نے سحر روڈ پر نعمت فریش واٹر کو فلٹر یشن پلا نٹ نہ ہو نے اور سیمپل فیل ہو نے کی بنا پر،راوی ٹا ؤ ن کی ٹیم نے قلعہ محمدی میں بو ٹی گجر ملک شا پ کو ملا وٹ شدہ دودھ فر و خت کر نے کی بنا پر ، سمن آبا د ٹا ؤ ن کی ٹیم نے شمع روڈ پر بسم اللہ جو س کا ر نر کو نا قص صفا ئی، ٹو ٹے ہو ئے فر ش اور ٹو ٹے فریزرز اور مکھیوں کی مو جو د گی کی بنا پر جبکہ بکر منڈی کے علا قہ میں سمیر بر گر کو مضر صحت کیچپ استعما ل کر نے اور ٹو ٹے ہو ئے فر ش اور ٹو ٹے فریزرز، عا قب ہو ل سیل ڈیلر کو جعلی جو س فر و خت کر نے کی بنا پرسربمہر کر دیا۔ گلبر گ ٹاؤ ن کی ٹیم نے لو کو ورکشا پ کے ایریا میں مختلف دکا نو ں پر جو س کو چیک کر تے ہو ئے تقریبا 170 لیٹر ملا وٹ شدہ اور سکرین ملا جوس اور سو ڈا واٹرضا ئع کیا جبکہ لبر ٹی ما ر کیٹ میں کر ا چی پر ا ٹھا اور کر ا چی ریڈ روک پرا ٹھا رول ریسٹو رینٹ کو گند ے با کس استعما ل کر نے اور گندی مشینو ں کی بنا پر جر ما نہ عائد کیا۔ علاوہ ازیں سمن آبا د ٹا ؤن کی ٹیم نے شمع روڈ پر نصیب مر غ چنے کو گندگی کی بنا پر،عز یز بھٹی ٹا ؤ ن کی ٹیم نے ہر بنس پو رہ میں لبھا ہو ٹل کو نا قص صفا ئی کی بنا پر اور ورکرز کے گندے کپڑے پہننے کی بنا پر، راوی ٹا ؤ ن کی ٹیم نے شیخ ٹکی والے اور عزیز ٹکی والے کو گندگی،علا مہ اقبا ل ٹا ؤ ن کی ٹیم نے لیا قت چو ک میں شاہ کو ٹ سویٹس کو گندے اور ٹو ٹے فر یزرز، گندے کچن اور بر تن دھو نے کے نا منا سب انتظا ما ت کی بنا پر جر ما نہ عائد کیااور بہتر ی کے احکا ما ت جا ری کیے۔

مزید : صفحہ آخر