ملتان سمیت پنجاب بھر میں بوسیدہ عمارتوں کے حوالے سے کارروائی سست روی کا شکار

ملتان سمیت پنجاب بھر میں بوسیدہ عمارتوں کے حوالے سے کارروائی سست روی کا شکار

ملتان(خبرنگار)ملتان سمیت صوبہ بھر میں خطرناک اور بوسیدہ عمارتوں کو مسمار،خالی اور مرمت کرانے کے اخراجات کا تعین نہ ہونے سے کارروائی سست روی کا شکار ہوگئی جبکہ پنجاب حکومت کی طرف اسی پراجیکٹ کے سلسلے میں ٹی ایم ایز کو ابتدائی فنڈز بھی جاری نہ ہوسکے۔صوبائی حکومت نے صوبہ بھر میں (بقیہ نمبر9صفحہ12پر )

خطرناک اور بوسیدہ عمارتوں کے اہم ایشو کو حل کرنے کیلئے اربن یونٹ کو خصوصی ٹاسک دیا تھا اور اربن یونٹ نے ڈویژنل سطح پر فوکل پرسن مقرر کرکے خطرناک اور بوسیدہ عمارتوں کے پہلے اعداد و شمار جمع کیے اور پھر ان عمارتوں کو مسمار کرنے،خالی کروانے اور مرمت کروانے کے پلان تیار کیا گیا اور ضلعی حکومتوں کو خطرناک عمارتوں کے خلاف کارروائی کیلئے ہنگامی اقدامات کرنے کے احکامات جاری کیے گئے اور متعلقہ ٹی ایم ایز کو اس ضمن میں فنڈز کرنے کی ہدایت کی گئی تھی اور بعدازاں فنڈز فراہمی کی بھی یقین دہانی کروائی گئی تھی مگر تاحال ٹی ایم ایز کو فنڈز نہ ملنے سے کارروائی التواء کا شکار ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر