پر امن ریلی پر حملے ، کارکنوں کو زخمی سے ھگبرانے والے نہیں مصطفی کمال

پر امن ریلی پر حملے ، کارکنوں کو زخمی سے ھگبرانے والے نہیں مصطفی کمال

 حیدرآباد(بیورو رپورٹ) پاک سرزمین پارٹی کے رہنماسید مصطفی کمال نے لندن میں ایم کیوایم کے قائد کے گھر کے باہراحتجاج کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ لندن میں پاک سرزمین پارٹی کا پہلا بیرون ملک آفس قائم کریں گے۔وہ جمعہ کو دیگر رہنماؤں کے ہمراہ حیدرآباد میں پریس کانفرنس کررہے تھے ۔مصطفی کمال نے کہا کہ لندن میں پارٹی آفس کھولنا اب ضروری ہوگیا ہے، کل کی تقریر میں متحدہ کے قائد نے جو لہجہ اختیار کیا اس سے ہمیں اپنی کامیابی پر یقین ہوگیا ہے، ایک ہارے ہوئے انسان کی جو باڈی لینگویج ہوتی ہے انہوں نے وہ تمام مغلظات بکی ہیں،ہم متحدہ کے کارکنوں کو جو بتارہے ہیں، انہوں نے تصدیق کردی کہ وہ سو فیصد ٹھیک ہے ۔اس موقع پر ایم کیوا یم کے سیکٹرانچارج راحیل قائم خانی نے پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت کا اعلان کیا۔مصطفی کمال کا مزید کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کے قائد نے کل پھر چند گھنٹوں کے لیے فاروق ستار کو قیادت دے دی، انہوں نے اپنے آخری سانس تک قیادت کسی کو دینی نہیں ہے، اس اقدام سے مجھے فاروق بھائی کی زندگی پرتشویش لاحق ہے، فاروق ستار کی زندگی کو خطرات لاحق ہیں ،اگر متحدہ کے قائد فاروق ستار کو سربراہی دے رہے ہیں تو اس کا مطلب ہوتا ہے کہ فاروق ستار کودنیا میں نہیں ہونا چاہیے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ سیکیورٹی ادارے فاروق ستار کو سیکیورٹی دیں، فاروق بھائی خود بھی اپنا خیال رکھیں،پارٹی میں ماضی کی ایسی بہت سی مثالیں موجود ہیں، متحدہ کے قائد نے نام لے لے کر گالیاں دی ہیں، جنرل راحیل اور آرمی کے ادارے سے درخواست ہے کہ ان کی گالیوں پر ناراض نہ ہوں،قائد متحدہ کی خواہش ہے کہ آرمی اور اسٹیبلشمنٹ کو نام لے کر ایسا کہیں کہ فوج غصے میں آکر اردو بولنے والوں پر ٹینک چڑھا دے،وہ چاہتے ہیں کہ اردو بولنے والوں کی لاشیں گریں،اردو بولنے والوں کی، مہاجروں کی لاشیں انہیں سوٹ کرتی ہیں،ان کی حیوانیت اور شیطانیت کو سوٹ کرتی ہییں کہ انہیں لاشیں اور گرفتاریاں ملیں،آرمی سے درخواست ہے کہ قائد ایم کیو ایم کی مغلظات پر ری ایکٹ نہ کریں۔مصطفی کمال نے کہا کہ ہم جہاں جہاں جارہے ہیں قائد متحدہ وہاں کے ایک ایک ورکر سے رابطہ کررہے ہیں،یہ آدمی جھوٹ بولتا ہے، ہمیں جو گالیاں بکیں ہم تو وہ لہجہ اختیار ہی نہیں کرسکتے، ایم کیو ایم والے ہمارے لہجے کی شکایت کرتیہیں، ان کے آدمی نے ہی تو سکھایا ہے،ہم نے کسی کے دفتر پر جاکر قبضہ نہیں کیا،الطاف حسین کچھ حیثیت نہیں رکھتے، یہ بھارتی انٹیلی جنس ایجنسی اور پاکستان کی سالمیت کے درمیان لڑائی ہے،الطاف حسین تو ایک مہرہ ہیں،دشمن الطاف حسین کے ذریعے حتی الامکان کوشش کریں گے کہ یہاں افرا تفری ہو،ان تمام شرارتو ں کا جواب لندن میں الطاف حسین کے گھر کے باہر دیں گے،اب پاکستان میں کہیں نہیں، لندن میں الطاف حسین صاحب کے گھر پر مظاہرہ ہوگا۔

مزید : کراچی صفحہ اول