سلطان محمود نا اہلی کیس ‘ الیکشن ٹربیونل بہاولپور کا فیصلہ کالعدم قرار

سلطان محمود نا اہلی کیس ‘ الیکشن ٹربیونل بہاولپور کا فیصلہ کالعدم قرار

مظفرگڑھ ، کوٹ ادو دائرہ دین پناہ(نمائندہ پاکستان، تحصیل رپورٹر،نامہ نگار) ممبر قومی اسمبلی حلقہ این اے 176 تحصیل کوٹ ادو ملک سلطان محمود ہنجرا کی طرف سے نا اہلی کے خلاف دائر سپریم کورٹ میں اپیل منظور ،الیکشن ٹربیونل بہاولپور کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا گیا تفصیل کے مطابق الیکشن 2013 میں مسلم لیگ ن کے امیدوار حلقہ این اے 176 الحاج ملک سلطان محمود ہنجرا نے مسلم لیگ فنگشنل کے امید وار ملک(بقیہ نمبر37صفحہ12پر )

غلام مصطفی کھر کو 12490 ووٹوں سے شکست دی تھی جس کے خلاف الیکشن ٹربیونل بہاولپور میں مصطفی کھر نے سلطان ہنجرا پر الیکشن میں دھاندلی ،زرعی ٹیکس نادہندہ ،اور 13 مرلہ پلاٹ حکومت پنجاب سے 1985 میں سستے داموں خریدنے کا الزام عائد کرتے ہوئے رٹ دائر کی تھی 18 جولائی 2014 کو ٹربیونل نے ممبر قومی اسمبلی سلطان ہنجرا کو نا اہل قرار دیتے ہوئے این اے 176 میں دوبارہ الیکشن کرانے کا حکم دیا تھا چنانچہ فیصلہ کو چیلنج کرتے ہوئے سلطان ہنجرا نے سپریم کورٹ میں رٹ دائر کر کے حکم امتناعی حاصل کر لیا تھا جس کی پونے دو سال سے سماعت جاری تھی 28اپریل2016 کو چیف جسٹس سپریم کورٹ انور ظہیر جمالی ،جسٹس امیر مسلم ہانی اور جسٹس اقبال حمید پر مشتمل 3 رکنی بنچ نے دو نوں طرف سے وکلاء کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کر لیا تھاچنانچہ13 مئی 2016 کو چیف جسٹس انور ظہیر جمالی نے ممبر قومی اسمبلی سلطان ہنجرا کی اپیل کو منظور کرتے ہوئے الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا فیصلہ کی اطلاع ملتے ہی سلطان ہنجرا سجدہ ریز ہو گئے جس کے بعد ہنجرا ہاؤس پر جشن کا سماں بن گیا ڈھول کی تھاپ پر لوگوں نے بھنگڑے ڈالے اور کئی من مٹھائی تقسیم ہوئی جبکہ مبارکباد ینے والوں کا تانتا بندھا رھا ۔صوبائی رکن اسمبلی احمد یار ہنجرا نے خطاب کرتے ہوئے کہا آج ن لیگ کی فتح کا دن ہے حق اور سچ کی فتح ہوئی ہم پر لگائے جانے والے کرپشن کے الزامات کی سپریم کورٹ نے نفی کر دی ہم عوام اور اللہ کی عدالت میں سرخرہ ہوئے ملک سلطان محمود ہنجرا ممبر قومی اسمبلی نے خطاب کرتے ہوئے کہا طاقت سر چشمہ صرف اللہ کی ذات ہے فتح اللہ پاک کے کرم اور حلقہ کی عوام کی دعاؤں کا ثمرہ ہے ۔

سلطان ہنجرا

مزید : ملتان صفحہ آخر