’’گوسلو‘‘پالیسی اورناجائز کٹوتیاں جاری، کاشتکارمایوسی کاشکار ہوگئے

’’گوسلو‘‘پالیسی اورناجائز کٹوتیاں جاری، کاشتکارمایوسی کاشکار ہوگئے

ملتان، وہاڑی، خانیوال، میلسی، بوریوالا، بدھلہ سنت ، گگومنڈی ، ٹھٹھہ صادق آباد(سپیشل رپورٹر228نمائندگان) محکمہ خوراک نے گندم خریداری کے حوالے سے ’’گوسلو‘‘کی پالیسی جاری رکھی ہوئی ہے جبکہ کاشتکاروں سے گندم میں ناجائز کٹوتیاں بھی کی جارہی ہیں۔ خریداری مراکز انچارجوں(بقیہ نمبر38صفحہ7پر )

سمیت عملہ دونوں ہاتھوں سے کسانوں کو لوٹنے میں مصروف ہے ملتان سے سپیشل رپورٹر کے مطابق ملتان سمیت ڈویثرن کے دیگر اضلاع میں محکمہ خوراک کی جانب سے گندم خریداری کے حوالے سے گوسلو پالیسی بدستور جاری ہے جبکہ محکمہ خوراک کے ذرائع کے مطابق 15مئی سے باردانہ اجراء کی پالیسی ایک مرتبہ پھر تبدیل کرتے ہوئے مرکز کی سطح پرایک ہزار بوری روزانہ کی بنیاد پر باردانہ جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کے باعث کسانوں میں مایوسی کی لہر دوڑ گئی ہے دوسری جانب گندم خریداری مراکز پر کسانوں سے غیر قانونی کٹوتیوں کا سلسلہ بھی عروج پر پہنچ گیا ہے جس کے باعث کسانوں میں غم وغصہ پایا جاتاہے کسانوں کے ردعمل سے بچنے کیلئے حکومتی شخصیات اور افسران نے گندم خریداری مراکز پر دورے کرنا بند کردیئے ہیں ۔متاثرہ کسانوں نے گندم خریداری پالیسی کو فلاپ قرار دیتے ہوئے وزیر اعلی پنجاب سے فوری کاروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔دریں اثناء ڈی سی ملتان کی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر صدر ملک عطاء الحق نے ڈسٹرکٹ فوڈ کنڑولر ملتان کے ہمراہ گزشتہ روز گندم خریداری مرکزلاڑ سے ملحقہ آڑھتوں پر پولیس کے ہمراہ اچانک چھاپے مارے جہاں سے ہزاروں بوری سرکاری باردانہ برآمد کرلیا گیا جبکہ مقامی آڑھتوں سے تین ٹرالیا ں لوڈ گندم بھی پکڑی گئی جس پر آڑھتی رشید احمد ،فلک شیر اور اشفاق احمد کیخلاف تھانہ بستی ملوک میں مقدمہ درج کرادیا گیا ہے اسی طرح دوسری کاروائی گندم خریداری مرکز بستی ملوک کے علاقہ میں عمل میں لائی گئی جہاں بستی ملوک منڈی میں آڑھتوں پر موجود سرکاری باردانہ قبضہ میں لیتے ہوئے 9آڑھتیوں بیوپاریوں کیخلاف مقدمات درج کرائے گئے ہیں ۔وہاڑی سے بیورو رپورٹ اور نمائندہ خصوصی کے مطابق گندم خرید سنٹروں 559ای بی ما چھیوال ، بنی شیل ، پی آر سنٹر، میاں پکھی سنٹر ودیگر پر کسانوں کااستحصال کیا جا رہا ہے اور آڑھتیوں ، بیوپاریوں اور مڈل مینوں کو نوا زا جا رہا تھا جس میں محکمہ خوراک ، محکمہ زراعت اور محکمہ ریونیو کے اہلکاران بھی گٹھ جوڑ کرکے راتوں رات ما لا مال بننے کے چکر میں بیوپاریوں کو نوا ز رہے ہیں جس پر جا وید علی ، اختر علی، عظمت علی ، اللہ دتہ ، چودھری رشید، عبدالمجید، فیاض احمد، علی اکبر، مختار احمد شدیر انجم ودیگر نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ کوئی پوچھنے والا نہیں ہے اعلیٰ افسران نے آنکھیں بند کررکھی ہیں گزشتہ سال بھی گندم خرید سنٹر ماچھیوال پر باردانہ اور گندم میں وسیع پیمانے پر مبینہ طور پرگھپلا ہو ا تھا جس کی انکوائری اعلیٰ سطح پر چل رہی ہے انہوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے فی الفور وہاڑی گندم خرید سنٹروں کے دورہ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔دریں اثنائگندم خریداری مہم کے دوران پنجاب حکومت کی ہدایات کی روشنی میں مڈل مین کے کردار کی حوصلہ شکنی کر کے کاشتکاروں کو ان کا حق دلانے کے لیے اسسٹنٹ کمشنر وہاڑی شیخ طاہر نے محکمہ خوراک کے سرکاری باردانہ میں تجارتی مقاصد کے تحت گندم رکھنے پر مختلف علاقوں میں کاررائی کی اڈا غلام حسین کے سید امتیاز حسین شاہ ،ندیم احمد ،وارث علی سے2سو بوری گندم اور4سو بیگ گندم اور رانا محمد زاہد ،رانا عمر فاروق سے1124بوری گندم اور حاجی سلطان سے 2سو بیگ گندم برآمد کر کے تھانہ لڈن میں 3 الگ الگ مقدمات درج کرادےئے اسی طرح تھانہ ٹھینگی میں محمد افضل سے239بیگ گندم اور عبداللہ خان سے 275بیگ گندم برآمد کر کے مقدمہ درج کرایا تھانہ کرمپور میں حافظ محمد شفیع ے245بوری گندم اور 155بیگ گندم برآمد کر کے مقدمہ درج کرایا گیا تھانہ سٹی میلسی میں مجید کمیشن غلہ منڈی میلسی کے آڑھتی محمد مجید سے 293بوریاں گندم اور184بیگ گندم برآمد کر کے مقدمہ درج کرادیا گیا پولیس نے ملزمان کے خلاف کارروائی شروع کر دی ہے۔خانیوال سے نمائندہ پاکستان کے مطابقیگزیکٹو ڈائریکٹر لاہور آرٹس کونسل محکمہ اطلاعات و ثقافت حکومت پنجاب کیپٹن (ر) عطاء محمد خان نے خانیوال میں گندم خریداری مراکز کا اچانک معائنہ کیا او رکاشتکاروں کو باردارنہ کے اجراء ‘گندم کی خریداری کے عمل کا جائزہ لیا ۔انہوں نے گندم خریداری مراکز پر موجود کسانوں سے مسائل اور دستیاب سہولتوں کی فراہمی بارے دریافت کیا ۔قبل ازیں کیپٹن (ر) عطاء محمد خان نے ڈی سی او آفس میں ڈی سی او خالد محمودشیخ اور محکمہ خوراک کے افسران کیساتھ گندم خریداری مہم کے حوالہ سے میٹنگ کی اور کاشتکاروں کو درپیش معمولی نوعیت کے جو مسائل ہیں انہیں فوری حل کرنے کی ہدایات جاری کیں۔میلسی نمائندہ خصوصی کے مطابق پاسکو سینٹر آ رے واہن کے پر چیز انسپکٹر نے میرٹ لسٹ کی بجائے سو سے دو روپے فی بوری لیکر باردانہ وہاڑی میں جاری کیا پر چیز انسپکٹر رائے عبدالکریم کیخلا ف زبردست شکا یا ت کی گئی کہ یہ سینٹر سے غائب رہتا ہے اور میرٹ لسٹ کی دھجیاں بکھیر دی ہیں سینٹر پر احتجاج کر نیوالوں میں اللہ ڈوایا ، فیض بخش ، محمد قاسم ، محمد رمضان ، محمد بلال ، تاج محمد ، اللہ بخش ، ریاض احمد ، محمد حسین نے سینٹر پر بتایا کہ ہم گزشتہ دس دن سے روزانہ آ تے ہیں ہمارا میرٹ لسٹ پر ایک سو پندرہ ، ایک سو بائیس ، ایک سو پینتیس نمبر ہے لیکن چھ سو ، پانچ سو ، چار سو ، تین سو والوں کو وہا ڑی سے باردانہ جاری ہوچکے ہے زونل ہیڈ راؤ محمد اکرم نے کہا کہ محمد طارق عارضی ملازم ہے میں اسکی انکوائری کرتا ہوں اگر واقع ہی اس سینٹر پر یہاں باردانہ تقسیم کرر ہے ہیں تو اس شکا یت کا ازالہ فوری کرونگا اس بارے میں اسسٹنٹ کمشنر میلسی سید شفقت رضا بخاری سے دریافت کیا گیا تو انہوں نے کہا ہم نے متعد بار چکر لگا یا ہے۔بورے والا سے تحصیل رپورٹر کے مطابقمقامی کاشتکار ندیم مشتاق رامے سکنہ 158ای بی نے بتایاکہ محکمہ پاسکو کے بورے والا مرکز کے ڈلن بنگلہ سنٹر اپنے پرچیز بلوں کی ادائیگی نجی بنک، بنک الفلاح بورے والا برانچ کے ذریعے کرتا ہے گذشتہ روز متعدد مقامی کاشتکاروں نے اپنے پرچیز بلوں کی وصولی کے لئے بلز دیگر بنکوں میں موجود اپنے کھاتوں کے ذریعے بنک الفلاح بھجوائے،توبنک الفلاح کے مینجر یاسر حسین اور دیگر عملہ نے ان پرچیز بلوں پر مختلف اعتراضات لگاکر ان کی ادائیگی روک دی اور پرچیز بل دیگر بنکوں کو واپس بھجوادئیے۔کاشتکاروں نے الزام عائد کیا ہے کہ بنک الفلاح کا عملہ ان کو مجبور کرتاہے کہ وہ اپنے کھاتے بنک الفلاح میں کھلوائیں تو تب ان کو ادائیگی ہوگی اس بارے میں جب ڈلن بنگلہ سنٹر کے انچارج خالد ڈھلوں سے مووقف لیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ ہم پرچیز بل مکمل کر کے بنک کو بھجوادیتے ہیں اب یہ بنک کی ذمہ داری ہے کہ وہ کاشتکاروں کو بروقت اس کی ادائیگی کرے بنک مینجر رائے یاسر حسین نے اس بات کی تصدیق کی کہ انہوں نے بلوں کی ادائیگی روکی ہے دوسری طرف پاکستا ن کسان اتحاد نے بنک کے اس اقدام کی بھر پور مذمت کی ہے۔مرکز گندم خرید بدھلہ سنت جو کہ اب کوٹھے والا پر واقع ہے پر انچارج کوآرڈینیڑ ڈاکڑ شاہد ندیم اور انچارج فرحان ملک نے اپنی من مانیاں شروع کی ہوئی ہیں اور پورا گندم مرکز خرید ٹاؤٹوں کے زیر سرپرستی چل رہا ہے کاشتکار ،کسان باردانہ حاصل کرنے اور اپنی گندم سنٹر پر دینے سے محروم ہیں اور بیوپاری ،مڈل مین اپنی گندم من مانے طریقوں سے بیچ رہے ہیں کاشتکاروں جن میں چوہدری ارشاد سندھو،طارق گل،ملک شریف ڈوگر،شعبان جھونگل،سرفراز جھونگل،رفاقت علی،محمد امین ،عامر شہزاد ،قیصر حسین،سجاد حسین ،امام بخش،نذیر راں،غلام مصطفی،عاشق خان،ساجد راں،مظہر امتیازوڑائچ،رمضان راں،رشید ارائیں،عظیم خان میو و دیگر نے احتجاج کرتے ہوئے بدھلہ تا ملتان روڈ بلاک کر دیا اور کہا کہ کسانوں،کاشتکاروں کے ساتھ ہونے والے ظلم کا حکام بالا نوٹس لیں۔گگومنڈی سے نامہ نگار کے مطابقمرکز گندم خرید بدھلہ سنت جو کہ اب کوٹھے والا پر واقع ہے پر انچارج کوآرڈینیڑ ڈاکڑ شاہد ندیم اور انچارج فرحان ملک نے اپنی من مانیاں شروع کی ہوئی ہیں اور پورا گندم مرکز خرید ٹاؤٹوں کے زیر سرپرستی چل رہا ہے کاشتکار ،کسان باردانہ حاصل کرنے اور اپنی گندم سنٹر پر دینے سے محروم ہیں اور بیوپاری ،مڈل مین اپنی گندم من مانے طریقوں سے بیچ رہے ہیں کاشتکاروں جن میں چوہدری ارشاد سندھو،طارق گل،ملک شریف ڈوگر،شعبان جھونگل،سرفراز جھونگل،رفاقت علی،محمد امین ،عامر شہزاد ،قیصر حسین،سجاد حسین ،امام بخش،نذیر راں،غلام مصطفی،عاشق خان،ساجد راں،مظہر امتیازوڑائچ،رمضان راں،رشید ارائیں،عظیم خان میو و دیگر نے احتجاج کرتے ہوئے بدھلہ تا ملتان روڈ بلاک کر دیا اور کہا کہ کسانوں،کاشتکاروں کے ساتھ ہونے والے ظلم کا حکام بالا نوٹس لیں۔ٹھٹھہ صادق آباد سے نامہ نگار کے مطابق چک نمبر 115/10Rکے رہائشی محمد جہان نے دیگر اہل علاقے شیر محمد ،محمدحسین، دلیل خان ،کرم حسین ،اعجاز احمد ،نصیر میتلا ،خدا بخش ،مرتضی ،غلام مصطفی ،محمد سردار ،امجد میتلا ،اور دیگرکے ہمراہ میڈیا کو بتایا کہ میری کھیوٹ نمبر 130،132،129میں حصہ دار مالک اراضی ہوں قبل ازیں کسان پیکج میں مجھے کوئی رقم نا ملی حلقہ پٹواری نسیم نے دیگر زمینداروں سے ساز باز کر کے میری اصل کاشت ان کے نام درج کر کے ان کو چیک جاری کر وایا اور ان سے اپنا ہزاروں روپے کا حصہ بھی وصول کیا متاثرین نے نے میڈیا کے سامنے شدید احتجاج کرتے ہو ئے وزیر اعلی پنجاب ڈی سی او خانیوال اور ایف آئی اے ملتان ،انٹی کرپشن ملتان سے نوٹس لینے کی اپیل کرتے ہو ئے ان محکموںؒ کو درخواست گزار بھی کر دی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر