چارسدہ ،نجی سکول کے استاد کی بیمار طالبعلم پر تشدد

چارسدہ ،نجی سکول کے استاد کی بیمار طالبعلم پر تشدد

چارسدہ (بیورو رپورٹ) چارسدہ میں نجی سکول میں مدرسین نے بیمار طالب علم کو معمولی گناہ کے پاداش میں مار مار کر آدموہ کر دیا ۔ بچے کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ۔ اساتذہ کے خلاف مقدمہ درج ۔ تفصیلات کے مطابق غفران میموریل ہائی سکول کے نویں جماعت کے طالب علم عبدالرحمان ولد عباد الرحمان نے میڈیا کو تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ گزشتہ روز سکول کے دو اساتذہ کرام شاہد اور یونس نے ان کو معمولی جرم کے پاداش میں بدترین تشدد کا نشانہ بنایا جس کی وجہ سے ان کا پورا جسم سن ہو گیا ۔ بچے کے والد نے ان کو علاج معالجہ کیلئے ہسپتال منتقل کیا اور کیجولٹی پولیس کو واقعہ میں ملوث اساتذہ کرام کے خلاف قانونی کاروائی کی رپورٹ درج کر دی ۔ بچے کے والد عباد الرحمان نے میڈیا کو بتایا کہ صوبائی حکومت کے مار نہیں پیار کا دعوی اور وعدہ جھوٹ کا پلندہ ثابت ہو رہا ہے کیونکہ آئے روز نجی اور سرکاری سکولوں میں طلباء کو تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے مگر ان کے خلاف کوئی کاروائی نہیں ہو رہی ہے ۔ انہوں نے محکمہ تعلیم اور صوبائی حکومت سے واقعہ کے حوالے سے غیر جانبدار انکوائری اور تشدد میں ملوث اساتذہ کے خلاف بھر پور کاروائی کا مطالبہ کیا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر