ہماری فوج کی کابل میں موجودگی کی وجہ پاکستان اور افغانستان میں موجود دہشت گردوں کے ٹھکانےہیں:امریکہ

ہماری فوج کی کابل میں موجودگی کی وجہ پاکستان اور افغانستان میں موجود دہشت ...
ہماری فوج کی کابل میں موجودگی کی وجہ پاکستان اور افغانستان میں موجود دہشت گردوں کے ٹھکانےہیں:امریکہ

  

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکہ نے خطے میں دہشت گردی کے خاتمے کے لئے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرنے کے اپنے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان اور افغانستان میں دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانوں کی وجہ سے ہماری فوج آج تک افغانستان میں موجود ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان جان کربی نے معمول کی پریس بریفنگ میں کہاکہ پاکستان کے ساتھ تعلقات امریکہ کے لئے بڑی اہمیت کے حامل ہیں کیونکہ ہمارے خطرات، خدشات اورخطے میں مفادات مشترکہ ہیں اور ہم ان کے حصول کے لئے مل کر کام کررہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اورافغانستان کو بد ستور دہشت گردی کے مشترکہ خطرے کا سامنا ہے اور اس مسئلے سے نمٹنے میں مدد دینے کے لئے امریکہ پاکستان کے ساتھ تعاون کررہا ہے۔

جان کربی کا کہنا تھا کہ پاکستان اور افغانستان دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے رابطہ میں ہیں اور امریکا دونوں ممالک کے درمیان مذاکراتی عمل کو آگے بڑھتا دیکھنا چاہتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکا پاکستان کےساتھ تعلقات میں کشیدگی نہیں چاہتا اور ہم طورخم بارڈر کو امدو رفت کے لیے کھلا دیکھنا چاہتے ہیں۔

جان کربی کا کہنا تھا کہ پاکستان اورافغانستان کو دہشت گرد نیٹ ورک کے خطرے کا سامناہے، دہشت گرد آج بھی دونوں ممالک کو محفوظ پناہ گاہوں کے طور پر استعمال کر رہے ہیں، دہشت گرد گروپوں کی وجہ سے ہی افغانستان میں امریکی فوج آج تک موجود ہے۔

دہشت گردی افغانستان اور پاکستان کے عوام کی مشترکہ دشمن ہے اور دونوں ملک تعاون اور باہمی رابطوں کے ساتھ اس کے خاتمے کے لئے کام کررہے ہیں اور ہم چاہتے ہیں کہ ان رابطوں اور تعاون میں تسلسل قائم رہے اور مزید بہتر ہو۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں