امریکہ کی فوجی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک خاتون جنرل لوری رابن سن جنگی کمانڈ کی سربراہ بن گئیں

امریکہ کی فوجی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک خاتون جنرل لوری رابن سن جنگی کمانڈ کی ...
امریکہ کی فوجی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک خاتون جنرل لوری رابن سن جنگی کمانڈ کی سربراہ بن گئیں

  

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکہ کی فوجی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک خاتون جنرل لوری رابن سن جنگی کمانڈ کی سربراہ بن گئی ہیں ۔ڈیلی میل کے مطابق ایئرفورس کی فور سٹار جنرل لوری رابن سن پہلی خاتون ہیں جو اعلیٰ ترین درجے کے امریکی جنگی کمانڈ کی سربراہ بنی ہیں۔

ہماری فوج کی کابل میں موجودگی کی وجہ پاکستان اور افغانستان میں موجود دہشت گردوں کے ٹھکانےہیں:امریکہ

امریکی خاتون جنرل لوری رابن سن نے جمعہ کے روز امریکی ریاست کولاراڈو میں نارتھ امریکن ایرو سپیس ڈیفنس کمانڈ اینڈ یو ایس ناردن کا چارج سنبھال لیا ہے ۔

جنرل لوری رابن سن کمانڈ اینڈ کنٹرول میں شاندار بیک گراﺅنڈ رکھتی ہیں وہ بیرون ملک بھی آپریشنز میں حصہ لے چکی ہیں۔اس عہدے کا چارج سنبھالنے سے پہلے جب وہ پیسیفک ایئر فورسز کی کمانڈر تھیں تو تقریباََ دنیا کے آدھے حصے سے زیادہ کا علاقہ ان کے ذمے تھا ۔

بھارت نے کچھ ایٹمی ہتھیار پاکستانی سرحد کے قریب منتقل کر دیئے: ایرانی میڈیا

قبل ازیں رواں سال مارچ میںامریکی وزیر دفاع ایش کارٹر نے اعلان کیا تھاکہ جنرل لوری رابنسن کو امریکی فوج کی ناردرن کمانڈ کی سربراہی کے لیے نامزد کیا گیا ہے۔جنرل لوری رابن سن نے 1982میں امریکی فضائیہ میں شمولیت اختیار کی تھی۔

مزید : بین الاقوامی