پاکستانی اپنے دوستوں کے فیس بک اکاﺅنٹ بلاک کروا رہے ہیں، مگر کیسے؟ آپ بھی جانئے

پاکستانی اپنے دوستوں کے فیس بک اکاﺅنٹ بلاک کروا رہے ہیں، مگر کیسے؟ آپ بھی ...
پاکستانی اپنے دوستوں کے فیس بک اکاﺅنٹ بلاک کروا رہے ہیں، مگر کیسے؟ آپ بھی جانئے

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) اگر آپ کے فیس بک اکاﺅنٹ پر 72 گھنٹوں کیلئے پابندی نہیں لگی تو پھر احتیاط کریں کیونکہ زرا سی لاپرواہی ضرور اس پابندی کا موجب بن سکتی ہے اور وہ لاپرواہی ایک مخصوص تصویر کسی دوست کو بھیجنے یا فیس بک پر شیئر کرنے کی صورت میں ہو سکتی ہے اور اس وجہ سے آپ کا فیس بک اکاﺅنٹ بغیر کسی وارننگ کے بند کر دیا جائے گا۔

پاکستان میں لوگ اپنے دوستوں اور جاننے والوں کو کچھ خاص تصاویر بالخصوص ایک بچے کی تصویر جس میں وہ ایک مچھلی کو پکڑے نظر آ رہا ہے، شیئر کرنے کو یا پھر انہیں بھیجنے کا کہہ رہے ہیں اور لوگ بغیر سوچے سمجھے ایسا کر بھی رہے ہیں جس پر ان کے اکاﺅنٹ 3 دن کیلئے بند کئے جا رہے ہیں۔ ذیل میں دی گئی تصویر سینسر کی گئی ہے کیونکہ اصل تصویر میں اصلی مچھلی کے ساتھ بچے کی ”مچھلی“ بھی نظر آ رہی ہے اور یہیں مسئلہ خراب ہوتا ہے کیونکہ فیس بک کی پالیسی کے مطابق 18 سال سے کم عمر افراد سے متعلق کسی بھی قسم کا فحش مواد ویب سائٹ پر شیئر نہیں کیا جا سکتا اور اگر کوئی ایسا کرتا ہے تو اس کا فیس بک اکاﺅنٹ 3 دن کیلئے بند کر دیا جاتا ہے۔

سوشل میڈیا ویب سائٹس بالخصوص فیس بک پر کسی کو بیوقوف بنانے کی بات کی جائے تو پاکستانی کسی سے پیچھے نہیں ہیں۔ ماضی میں بھی کچھ ایسی ہی کارروائی کی گئی تھی جس میں پاکستانی صارفین کی جانب سے مختلف افراد کو پیغامات بھیجے جاتے تھے جو ان کی فرینڈز لسٹ میں شامل نہیں ہوتے تھے اور اس پیغام میں متعلقہ شخص کے نام سے متعلق مزاحیہ باتیں بھیجی جاتی تھیں۔

اگر آپ کا کوئی جاننے والا یا پھر کوئی فیس بک فرینڈ جسے آپ حقیقی زندگی میں نہیں جانتے، فیس بک کی پالیسی کے خلاف کسی بھی قسم کی تصویر بالخصوص ”مچھلیوں“ کے ساتھ بچے کی تصویر بھیجنے یا پھر فیس بک پر شیئر کرنے کا کہے تو ایسا بالکل نہ کریں کیونکہ اگر آپ نے ان کا کہا مان لیا تو پھر اپنے فیس بک اکاﺅنٹ پر پابندی لگنے کیلئے بھی تیار ہو جائیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس