چین نے اپنی فوجیں سرحد پر پہنچادیں، بھارت کی نیندیں اُڑگئیں

چین نے اپنی فوجیں سرحد پر پہنچادیں، بھارت کی نیندیں اُڑگئیں
چین نے اپنی فوجیں سرحد پر پہنچادیں، بھارت کی نیندیں اُڑگئیں

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نئی دلی (نیوز ڈیسک) امریکی محکمہ دفاع کی ایک سالانہ رپورٹ میں چین کی بھارت کی طرف پیش قدمی کا دعوٰی سامنے آیا ہے، جس کے بعد بھارتی حکام اور افواج پر لرزہ طاری ہو گیا ہے۔

اخبار ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ رپورٹ امریکی دفاعی ادرے پینٹاگون نے ”چین کی ملٹری وسکیورٹی ڈویلپمنٹ“ کے نام سے جاری کی ہے ۔ اخبار کے مطابق رپورٹ کے حوالے سے امریکی ڈپٹی اسسٹنٹ سیکرٹری آف ڈیفنس فار ایسٹ ایشیا ابراہم ایم ڈنمارک کا کہنا تھا”ہم نے بھارتی سرحد کے قریبی علاقوں میں چینی فوج کی صلاحیت اور طاقت میں اضافہ نوٹ کیا ہے۔“بھارتی میڈیا نے اپنے حکام اور افواج کو تسلی دینے کے لئے ابراہم ایم ڈنمارک کے ایک بیان کا حوالہ بھی دیا ہے، جس میں انہوں نے کہا، ”ہم بھارت کے ساتھ اپنے باہمی روابط کو بڑھانا جاری رکھیں گے۔ ہم بھارت کے ساتھ روابط اس کی اہمیت کی وجہ سے رکھتے ہیں۔“

چین اور روس کے مقابلے کیلئے امریکہ نے اپنے جدید ترین جنگی جہاز پہنچادئیے، سنگین خطرہ پیداہوگیا

امریکی محکمہ دفاع نے اپنی رپورٹ میں بھارت کی سرحد کے قریب، اور خصوصاً پاکستان میں چین کی عسکری موجودگی کا دعوٰی کیا ہے، اور خبردار کیا کہ چین اپنے دوست ممالک، جیسا کہ پاکستان، میں مزید بحری لاجسٹکس مراکز قائم کرنے کی کوشش کرے گا۔ رپورٹ میں ستمبر 2015ءمیں چین اور بھارت کے درمیان عسکری تناﺅ کا حوالہ دیتے ہوئے خبردار کیا گیا کہ سرحدوں کے ساتھ بھارتی اور چینی افواج مسلح گشت کررہی ہیں جو کہ تشویشناک بات ہے۔

پاکستانیوں کے لئے بچت کا شاندار موقع، ایسی ویب سائٹ آگئی کہ آپ کی خوشی کی انتہا نہ رہے گی

یاد رہے کہ دیگر ہمسایہ ممالک کی طرح چین کے ساتھ بھی بھارت کے سرحدی تنازعات چل رہے ہیں، اور خصوصاً ارونا چل پردیش کا تنازعہ دونوں ممالک کے درمیان سخت کشیدگی کا باعث بن چکا ہے۔ چین کے مطابق یہ علاقہ تبت کا حصہ ہے، اور یوں چین کا حصہ ہے، جبکہ دوسری جانب بھارت اسے اپنا حصہ قرار دینے پر بضد ہے۔

مزید : بین الاقوامی