پاک افغان بارڈر طورخم کومستقبل میں کسی صورت بند نہیں ہونا چاہئے:آفتاب شیرپاؤ

پاک افغان بارڈر طورخم کومستقبل میں کسی صورت بند نہیں ہونا چاہئے:آفتاب شیرپاؤ
پاک افغان بارڈر طورخم کومستقبل میں کسی صورت بند نہیں ہونا چاہئے:آفتاب شیرپاؤ

  

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک)سابق وفاقی وزیر داخلہ آفتاب احمد خان شیرپاؤ نے پاک افغان بارڈر طورخم کے کھولنے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کی حکومتیں مستقبل میں بارڈر کی بندش کی نوبت نہ آنے دیں کیونکہ اس قسم کے مسائل سے اسلام آباداور کابل میں نہ صرف دوریاں پیدا ہوں گی بلکہ باہمی تعلقات پر بھی منفی اثرات مرتب ہوں گے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آفتاب شیر پاؤ کا کہنا تھا کہ چار دن کی بندش کے بعد بارڈرکا دوبارہ کھولنادونوں ممالک کے عوام کے لئے انتہائی خوش آئند ہے، ضرورت اس امر کی ہے کہ دونوں ممالک مل کر دہشت گردی کے خاتمے اور سرحدی معاملات کو سنجیدہ کوششوں کے ذریعے حل کرے تاکہ آئندہ ایسی غلط فہمی جنم نہ لے ۔انہوں نے کہا کہ پاک افغان بارڈر کی بندش سے نہ صرف لوگوں کو اذیت کا سامنا کر نا پڑا بلکہ کاروباری حضرات کو بھی گاڑیوں کی بندش کی وجہ سے کئی ملین روپے کا نقصان برداشت کر نا پڑا۔

مزید : پشاور