ایف بی آئی چیف کو نکالنے کے بعد ٹرمپ نے اسے ایسا حکم دے دیا کہ پوری دنیا میں ہنگامہ کھڑا ہوگیا

ایف بی آئی چیف کو نکالنے کے بعد ٹرمپ نے اسے ایسا حکم دے دیا کہ پوری دنیا میں ...
ایف بی آئی چیف کو نکالنے کے بعد ٹرمپ نے اسے ایسا حکم دے دیا کہ پوری دنیا میں ہنگامہ کھڑا ہوگیا

  

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) چند روز قبل امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے ایف بی آئی کے ڈائریکٹر جیمز کومی کو عہدے سے برطرف کر دیاتھا۔ ان پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ انہوں نے گزشتہ ہفتے کانگریس کو ہلیری کلنٹن کی ای میلز کے بارے میں غلط معلومات فراہم کی تھیں۔ تاہم اب اس کی اصل وجہ سامنے آ گئی ہے۔ عالمی خبررساں ایجنسی رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق ڈونلڈٹرمپ کے انتخاب جیتنے کے بعد سے الزامات عائد کیے جا رہے ہیں کہ انہیں روس نے انتخابات میں الیکٹرانک مداخلت کرکے جتوایا اور جیمز کومی اس وقت ان الزامات کی تفتیش کر رہے تھے اور امریکی الیکشن میں روس کی مبینہ مداخلت کو بے نقاب کرنے جا رہے تھے۔

اگر مزید پابندیاں عائد کی گئیں تو نیوکلیئر پروگرام تیز کردیں گے، شمالی کوریا کا امریکی کانگریس کو خط

رپورٹ کے مطابق جیمز کومی کو معطل کرنے کے بعد گزشتہ روز ڈونلڈٹرمپ نے اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ کے ذریعے انہیں دھمکی دی ہے کہ وہ کسی بھی حوالے سے میڈیا سے گفتگو مت کریں۔ٹوئٹر پر کھلے عام ڈونلڈٹرمپ کا اس طرح کسی سابق عہدیدار کو دھمکی دینا غیرمعمولی اقدام ہے جس سے ان افواہوں کو تقویت ملی ہے کہ وہ امریکی انتخابات میں روسی مداخلت کی تحقیق کرنے والوں کو خاموش کرنا چاہتے ہیں۔ناقدین کا کہنا ہے کہ ”روس نے ممکنہ طور پر الیکشن جیتنے میں ڈونلڈٹرمپ کی جو مدد کی تھی، جیمز کومی اسے بے نقاب کرنے والے تھے جس کی وجہ سے انہیں معطل کر دیا گیا۔“نیویارک ٹائمز نے اپنی ایک رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ ڈونلڈٹرمپ نے جنوری میں جیمز کومی سے وفاداری کا عہد کرنے کو بھی کہا تھا لیکن کومی نے انکار کر دیا۔

مزید :

بین الاقوامی -