یو ایس قونصلیٹ جنرل کرکٹ کوچنگ کیمپ بلندخواب دیکھنے والی قومیں ہی ترقی کرتی ہیں

یو ایس قونصلیٹ جنرل کرکٹ کوچنگ کیمپ بلندخواب دیکھنے والی قومیں ہی ترقی کرتی ...

  

کسی بھی ملک کی نوجوان نسل کی تعمیر و نو کے لئے صحت مندانہ کھیل بے حد اہمیت رکھتے ہیں۔ کھیل نہ صرف جسمانی چستی پیدا کرتے ہیں بلکہ ذہن کو بھی جلا بخشتے ہیں۔ نیشنل کرکٹ اکیڈمی لاہور میں نوجوان طالبات کے لیے یو ایس قونصلیٹ جنرل کرکٹ کوچنگ کیمپ کا انعقاد کیا گیا، امریکی قونصلیٹ جنرل لاہوریوری فیکیو نے کیمپ میں شریک طالبات کے ساتھ کرکٹ کھیلی اور تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خواتین قوموں کی ترقی میں اہم کردار ادا کرتی ہیں،پاکستان کے ذمہ دار شہری محنت اور لگن جاری رکھیں،پشاور زلمی فاؤنڈیشن اور پاکستان کرکٹ بورڈ کے اشتراک سے نیشنل کرکٹ اکیڈمی لاہور میں منعقدہ ایک روزہ یو ایس قونصلیٹ جنرل کرکٹ کوچنگ کیمپ میں لاہور اور پشاور سے تعلق رکھنے والی20‘20 نوجوان طالبات کرکٹرز کو شرکت کا موقع دیا گیا، امریکی کونسل جنرل یوری فیکیو نے طالبات کے ساتھ کرکٹ کھیلی اور ٹیم ورک کے فروغ سے متعلق پیغام بھی دیا،انہوں نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خواتین قوموں کی ترقی میں اہم کردار ادا کرتی ہیں اورجو قومیں بلند خواب دیکھتی ہیں وہی ترقی کرتی ہیں، انہوں نے کہا کہ ایونٹ کا مقصد بچیوں میں احساس پیدا کرنا ہے کہ وہ کسی سے کم نہیں،خواتین مردوں کے شانہ بشانہ ہر شعبے میں آگے بڑھ سکتی ہیں،بچیوں میں ٹیلنٹ دیکھ کر خوشی ہوئی ،خواتین کو کھیلوں کی سرگرمیوں میں حصہ لینے کا کم موقع ملتا ہے تاہم اس طرح کے ایونٹس کے انعقاد سے ان میں اعتماد پیدا ہوگا اور ان میں چیلنجز کا سامنے کرنے کا حوصلہ پیدا ہوگا ، اس موقع پر یو ایس قونصلیٹ لاہور کی پبلک افیئرز آفیسرفرح خان نے کہاکہ امریکہ میں کرکٹ کی تاریخ پرانی ہے اور 1844میں امریکہ اور کینیڈا کے مابین کرکٹ میچ کھیلا گیا تھا ،اب کرکٹ سے زیادہ بیس بال کا کھیل امریکہ میں مقبول ہے تاہم مختلف ممالک سے تعلق رکھنے والے ریجنز کرکٹ کھیل رہے ہیں،انہوں نے کہا کہ پاکستان میں کرکٹ بہت مقبول ہے اور اس سے کھلاڑیوں کو نہ صرف ڈسپلن اور ٹیم ورک کی اہمیت کا پتہ چلتا ہے بلکہ صحت مندانہ سرگرمیوں میں حصہ لینے کا موقع ملتا ہے، اس ایونٹ کے انعقاد میں تعاون کرنے پر ہم پی سی بی اور پشاور زلمی کے تعاون کے مشکور ہیں ، فرح خان نے نوجوان طالبات کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ انہیں ناکامیوں سے مایوس نہیں ہونا چاہیے بلکہ ناکامی کے بعدمزید محنت اور لگن سے کام کرنا چاہیے ،پشاور زلمی کے سی ای او جاوید آفریدی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پشاور زلمی مردوں کے ساتھ ساتھ خواتین کرکٹ کو بھی فروغ دے گی،پشاور کی کھلاڑیوں کو یہاں آکر لاہوریوں کی محبت کا احساس ہوا ،یو ایس قونصلیٹ کے ساتھ مل کر پشاور میں بھی ایسا پروگرام کریں گے،ٹاپ ماڈل مہرین سید اور اداکار میکال حسن نے بھی طالبات کے ساتھ کرکٹ کھیلی اور انکی حوصلہ افزائی کی،سابق کرکٹر مشتاق احمد نے کہاکہ اس طرح کے ایونٹ کے انعقاد سے خواتین کرکٹ کو زیادہ مقبولیت ملے گی،انہوں نے کہاکہ خواتین کھلاڑیوں کو ہار کر کبھی مایوس نہیں ہونا چاہئے بلکہ اپنی محنت کو جاری رکھتے ہوئے جیت کی راہ کی طرف گامزن ہونا چاہئے ،لیجنڈری کرکٹر مشتاق احمد اور زلمی فاؤنڈیشن کے سربراہ جاوید آفریدی نے شاندار تقریب کے انعقاد پر امریکی قونصل جنرل کا شکریہ ادا کیا اور جاوید آفریدی نے پشاور میں بھی ایسی تقریب کے انعقاد کے لیے یوری فیکیو کو دعوت بھی دی۔نیشنل کرکٹ اکیڈمی لاہور کے ہیڈ کوچ و سابق ٹیسٹ کرکٹر مشتاق احمد نے کہا ہے کہ کرکٹرز کو کبھی ہار سے نہیں گھبرانا چاہئے، ناکامی ہی کامیابی کا زینہ ہے۔ میڈیا سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی قوم ہار سے نہیں گھبراتی۔ پاکستان کرکٹ ٹیم ورلڈ چیمپئن اسلئے بنی تھی کہ ہم لوگ ہار سے نہیں ڈرتے تھے، موجودہ کرکٹرز کو بھی شکست کے خوف کو ذہن سے نکال کر بھرپور محنت کرنی چاہئے اور نتیجہ اللہ کی ذات پر چھوڑ دینا چاہئے۔ اللہ کسی کی محنت کو رائیگاں نہیں جانے دیتا ۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ نیشنل کرکٹ اکیڈمی لاہور میں نوجوان طالبات کیلئے منعقدہ یو ایس قونصلیٹ جنرل ایک روزہ کرکٹ کوچنگ کیمپ کا انعقاد ایک اچھی کاوش ہے، اس سے نہ صرف خواتین کرکٹ کو فروغ ملے گا بلکہ خواتین کو فزیکل سرگرمیوں کی اہمیت سے آگاہی حاصل ہوگی۔ اس طرح کے کیمپس کا انعقاد مسلسل ہونا چاہئے۔ کرکٹ کی ایسی سرگرمیوں سے خواتین کی حوصلہ افزائی ہوتی ہے اور وہ نہ صرف کھیلوں بلکہ زندگی کے ہر شعبے میں آگے بڑھنے کی کوشش کرتی ہیں۔ ان کو ڈسپلن اور ٹیم ورک سے آگاہی ہوتی ہے۔

مزید :

ایڈیشن 1 -