برطانوی عدالت کا تاجر کو سابقہ بیوی کو 45.3 کروڑ پاؤنڈ کی ادائیگی کرنیکا حکم

برطانوی عدالت کا تاجر کو سابقہ بیوی کو 45.3 کروڑ پاؤنڈ کی ادائیگی کرنیکا حکم

  

لندن (اے پی پی) برطانیہ کی ایک عدالت نے گیس اور تیل کے سابق تاجر کو اپنی سابقہ بیوی کو 45.3 کروڑ پاؤنڈ (58 کروڑ امریکی ڈالر) کی ادائیگی کرنے کا حکم دیا ہے ،یہ ملکی تاریخ میں طلاق کے نتیجے میں کسی بھی خاتون کو ملنے والی سب سے بڑی رقم ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق 61 سالہ تاجر اور اس کی 41 سالہ مطلقہ بیوی دونوں ہی روسی نژاد ہیں۔ انہوں نے 20 سال قبل ماسکو میں شادی کی تھی اور ان کے دو بچے بھی ہیں۔ بعد ازاں یہ جوڑا برطانیہ منتقل ہو گیا۔برطانوی عدالت کے جج کے مطابق مطلقہ خاتون کو مجموعی "ازدواجی اثاثوں" کا 41.5% حصّہ دیا گیا ہے جو خاتون کی جانب سے اپنے شوہر کے ساتھ گزارے جانے والے بیس برسوں کا زرِ تلافی ہے۔ جج کا کہنا ہے مذکورہ مطلقہ نے بیس برس تک کسی بھی خادمہ یا ملازمہ کی معاونت کے بغیر خاتونِ خانہ ہونے اور دونوں بچوں کی تربیت کی ذمے داری انجام دی۔

مزید :

عالمی منظر -