مقبوضہ کشمیر :آسیہ اندرابی کی مسلسل غیر قانونی نظر بندی کی مذمت

مقبوضہ کشمیر :آسیہ اندرابی کی مسلسل غیر قانونی نظر بندی کی مذمت

  

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے دختران ملت کی سربراہ آسیہ اندرابی اور انکی ساتھی فہمیدہ صوفی کی مسلسل غیر قانونی نظر بندی کی شدید مذمت کرتے ہوئے انکی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق ہائی کورٹ بارایسوسی ایشن کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ آسیہ اندرابی سخت علیل ہیں لیکن اسکے باوجود انہیں نظر بند کیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آسیہ اندرابی کوتھانے میں انتہائی خستہ حال کمرے میں رکھا گیا ہے جہاں صفائی ستھرائی کا کوئی انتظام نہیں ہے جس کی وجہ سے انکی علالت میں اضافہ ہو گیا ہے۔

ترجمان نے کہا کہ دختران ملت کی سربراہ اور انکی ساتھی کوجس ابتر حالت میں رکھا گیا ہے وہ آئین و قانونی کی کھلی خلاف ورزی ہے اور یہ کٹھ پتلی انتظامیہ کے غیر اخلاقی اور غیر انسانی طریقہ کار کا بھی واضح ثبوت ہے۔ یاد رہے کہ آسیہ اندرابی کو 26اپریل کو فہمیدہ صوفی کے ہمراہ گرفتار کیا گیا تھا اور انہیں سرینگر کے رام باغ تھانے میں نظر بند رکھا گیا ہیں۔ دریں اثنا ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے کل جماعتی حریت کانفرنس کے سینئر رہنما مسرت عالم بٹ کے خلاف 35ویں مرتبہ کالا قانون پبلک سیفٹی ایکٹ لاگو کرنے کے کٹھ پتلی انتظامیہ کے ناروا اقدام کی بھی سخت مذمت کی ہے۔ بار ترجمان نے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل ، ایمنسٹی انٹرنیشنل ، ایشیا واچ اور انسانی حقوق کے دیگر عالمی اداروں سے اپیل کی کہ وہ مقبوضہ علاقے میں انسانی علاقے انسانی حقوق کی بگڑھتی ہوئی صورتحال کا نوٹس لیتے ہوئے کشمیریوں کے تحفظ کے لیے آگے آئیں۔

مزید :

عالمی منظر -