اتوار کے روز اساتذہ کی ٹریننگ درست اقدام نہیں ہے ،رانا لیاقت

اتوار کے روز اساتذہ کی ٹریننگ درست اقدام نہیں ہے ،رانا لیاقت

  

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)پنجاب ٹیچرز یونین کے مرکزی سیکرٹری جنرل رانا لیاقت علی نے کہا ہے کہ اساتذہ ٹریننگ کے خلاف نہیں ہیں مگر وہ کونسی مجبور ی آن پڑی ہے کہ اچانک اتوار کے روز بھی اساتذہ کو ٹریننگ دینا ضروری ہوگیا ہے۔ سات روز مسلسل کام کرنے کے بعد اتوار کو اساتذہ اور خصوصاً خواتین اساتذہ نے اپنے بیشتر گھریلو کام نمٹانے ہوتے ہیں، خوشی و غمی میں شرکت یا دیگر تقریبات اور عزیز و اقارب کے یہاںآنا جانا ہوتا ہے۔اتوار کے روز اساتذہ کی ٹریننگ کروانا درست اقدام نہیں ہے اور مسلسل سات روز کام کرنے کے بعد ایک چھٹی کو بھی چھین لینا اساتذہ کے بنیادی حقوق غصب کرنے کے مترادف ہے۔

ایسا معلوم ہوتا ہے کہ اساتذہ میں بے چینی و اضطراب پیدا کرکے اُن کو سڑکوں پر آنے کے لئے مجبور کیا جا رہا ہے۔ ایسی ٹریننگ سود مند ثابت نہ ہوگی جو مجبوری اور زبردستی کے حالات میں کی جائے۔DSDگزشتہ دس سالوں ٹیچرز ٹریننگ کے نام پر اربوں روپے ضائع کرچکا ہے۔CPD پرگرام ناکام ہو چکا ہے اور اب ADU(اکیڈمک ڈویلپمینٹ یونٹ) کے نام پر نیا منصوبہ شروع کیا جا رہا ہے۔

خدارا اساتذہ پر رحم کیا جائے ۔رخصت اتفاقیہ پر پہلے ہی غیر اعلانیہ پابندی عائد ہے اور اب اتوار کی چھٹی بھی ختم کی جارہی ہے۔لہذا اساتذہ کو مجبور نہ کیا جائے کہ وہ اتوار کے روز ہونے والی ٹریننگ کا بائیکاٹ کردیں اور بعد ازاں اُ ن کو مورد الزام ٹہرا کر سزائیں دی جائیں۔انہوں نے کہا کہ ان حالات کی تمام تر ذمہ داری DSD پر عائد ہوگی۔رانا لیاقت علی نے نئے سیکرٹری سکولز ڈاکٹر محمد اللہ بخش کو سیکرٹری سکولز کا اضافی چارج سنبھالنے پر پنجاب ٹیچرز یونین کی جانب سے مبارکباد پیش کی اور مطالبہ کیا کہ وہ حالات کی سنگینی کا نوٹس لیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -