ایل او سی پر پھر بھارتی جارحیت ،6شہری زخمی ،پاک فوج کا جوابی وار،بنکر تباہ ،بھارتی اشتعال انگیزی کا منہ توڑ جواب دیا جائے:جنرل باجوہ

ایل او سی پر پھر بھارتی جارحیت ،6شہری زخمی ،پاک فوج کا جوابی وار،بنکر تباہ ...

  

راولپنڈی،اسلام آباد، کھوئی رٹہ،نکیال(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) بھارتی فوج نے ایک مرتبہ پھر لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر مختلف سیکٹرز کریلا ، کوٹ کوتیرا ، کھوئی رٹہ،سبز کوٹ، بارو ، ٹنڈر اور خنجرمیں سیز فائر کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بلااشتعال فائرنگ و گولہ باری کی جس سے4خواتین سمیت 6 شہری زخمی ہو گئے ، پاک فوج کے جوانوں نے بھی بھارتی فائرنگ کا بھرپور جوا ب دیا اور ان بنکرز کو نشانہ بنایا جہاں سے سویلین آبادی پر فائرنگ کی جارہی تھی، جس سے بھارتی گنیں اور توپ خانہ خاموش ہو گئے جبکہ بنکرز کے بھی تباہ ہونے کی اطلا عا ت ہیں ۔ دریں اثنا بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر جی پی سنگھ کو دفتر خارجہ طلب کرکے ایل او سی پر سیز فائر معاہدے کی بھارتی خلاف ورزی پر احتجاج کیا گیا ہے جبکہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ایل او سی پر جنگ بندی کی بھارتی خلاف ورزیوں کا موثر جواب دینے پر پاک فوج کے جوانوں کو سراہتے ہوئے ،آئندہ بھارتی بلا اشتعال فائرنگ و گولہ باری کا منہ توڑجواب دینے کی بھی ہدایت کر دی ۔ ادھر ترجمان پاک فوج کا کہنا ہے کہ بھارت ایل او سی پر کسی بھی مہم جوئی سے باز رہے ورنہ اسے خمیازہ بھگتنا پڑے گا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی فوج کی طرف سے ہفتہ کے روز سیز فائر کی خلاف ورزی کا سلسلہ دن بھر جاری رہا صبح کے وقت نکیال سیکٹر میں سیز فائر کی خلاف ورزی کے بعد باروہ سیکٹر میں بھی سیز فائر کی خلاف ورزی کی گئی ،آخری اطلاعات کے مطابق فائرنگ کا تبادلہ جاری تھا۔ پاکستانی فوجیوں نے ان بھارتی بنکرز کو بھر پور انداز میں نشانہ بنایا جہاں سے شہری آبادی پر فائرنگ کی جا رہی تھی ۔ بھارتی فائرنگ سے کھوئی رٹہ سیکٹر میں 2خواتین سمیت 3شہری جن میں 58 سالہ زمرد بیگم 35 سالہ شازیہ پروین اور 17 سالہ نوجوان محمد انضمام شامل ہیں زخمی ہو گئے ۔قبل ازیں بھارتی بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں کوٹ کوتیرا سیکٹر کے گاؤں سوہانہ کے تین شہری جن میں حاجی محمد یونس ولد عبد العزیز، ریحانہ بی بی زوجہ محمد آصف اور ثمینہ بیگم زوجہ طفیل مغل شامل ہیں شدید زخمی ہو گئے ۔تمام زخمیوں کو قریبی ٹی ایچ کیو ہسپتالوں میں منتقل کر دیا گیا ہے ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی فوج مقبوضہ کشمیرمیں جاری تحریک آزادی سے عالمی برادری کی توجہ ہٹانے کیلئے لائن آف کنٹرول پر مسلسل جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کررہی ہے اور3روز قبل بھی بھارتی اشتعال انگیزی کے نتیجے میں 3افراد شہید ہو گئے تھے ۔دریں اثناء آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ایل او سی پر نکیال سیکٹر کا دورہ کیااور جنگ بند ی کی بھارتی خلا ف ورزیوں کا موثر جواب دینے پاک فوج کے جوانوں کو سراہا ۔ اس موقع پر مقامی کمانڈر نے سربراہ پاک فوج کو ایل او سی کی صورتحال پر بر یفنگ دی،جبکہ آرمی چیف نے آپریشنل تیاریوں کو سراہا۔اپنے دورے کے دوران جنرل قمر جاوید باجوہ مادر وطن کیلئے جا م شہادت نوش کر نیوالے لیفٹیننٹ خاور کے گھربھی گئے، جہاں انہوں نے شہید کے والدین سے ملاقات کی اور لیفٹیننٹ خاور کی عظیم قربانی کو خراج تحسین پیش کیا،میڈیا رپورٹس کے مطابق آرمی چیف نے پاک فوج کو ہدایت کی کہ بھارتی اشتعال انگیزی کا بھرپور جواب دیا جا ئے ۔ ا ن کا کہنا تھا ایل او سی پر تعینات جوانوں کی قربانیاں قابل تقلید ہیں، دورہ کے موقع پرکور کمانڈر راولپنڈی لیفٹیننٹ جنرل ندیم رضا بھی آرمی چیف کے ہمراہ تھے، دوسری طرف بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر جی پی سنگھ کو دفتر خارجہ طلب کیا گیا جی پی سنگھ سے ایل او سی پر سیز فائر معاہد ے کی بھارتی خلاف ورزی پر احتجاج کیا گیااوربھارت کو خبردار کیا گیا کہ سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی نہ کرے۔دریں اثناء ہفتہ کوڈی جی آئی ایس پی آرمیجرجنرل آصف غفورکی طرف سے جاری بیان کے مطابق پاک فوج نے واضح کیا ہے لائن آف کنٹرول پربھار ت کی جانب سے بے گناہ شہریوں کو نشانہ بنا یا جارہاہے،کسی بھی قسم کی مہم جوئی کاپوری قوت سے جواب دیاجائیگا، بھارت مسلسل اشتعال انگیزیاں کر رہا ہے تاہم ، پاک فوج اپنے د فا ع سے واقف ہے ،بھارت کو کسی بھی مہم جوئی کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا، سرجیکل سٹرائیک کے ڈرامہ کی کوشش کا بھی منہ توڑ جواب دیا جائیگا ۔ بھار تی فوج لائن آف کنٹرول کے دونوں جانب بے گناہ شہریوں کو نشا نہ بنا رہی ہے۔لائن آف کنٹرول پر بھارت کی جانب سے کسی بھی قسم کی مہم جوئی اس کی غلطی ہوگی اور اس کاپوری قوت سے جواب دیا جا ئے گا جو غیرارادی نتائج کاباعث بن سکتا ہے۔

بھارتی جارحیت

مزید :

صفحہ اول -