رمضان میں بھی احتجاج جاری رہے گا

رمضان میں بھی احتجاج جاری رہے گا
رمضان میں بھی احتجاج جاری رہے گا

  

کراچی (این این آئی) پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے صدر ،سندھ کے سینئر وزیر برائے خوراک نثار احمد کھوڑو نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کے خلاف رمضان میں بھی احتجاج جاری رکھا جائے گا ۔ یہ احتجاج صرف سندھ تک محدود نہیں ، پورے ملک میں ہو رہا ہے ۔ وفاقی حکومت ڈھیٹ ہے ۔ اس پر احتجاج کا اثر نہیں ہو رہا ۔ سانحہ 12 مئی کی تحقیقات کیوں نہیں ہو ئی؟ اس سوال کا جواب ہم نہیں ، عدلیہ سے پوچھا جائے ۔۔ مصطفی کمال کو ملین مارچ کرنے کا حق ہے لیکن جب مشرف کے دور میں ان لوگوں کا بلاشرکت غیر ے کراچی پر راج تھا اور وسائل کی بھرمار تھی ، اس وقت وہ کراچی کے مسائل حل کر لیتے تو آج انہیں لانگ مارچ کی ضرورت نہ پڑتی ۔پیپلز پارٹی سندھ ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نثار احمد کھوڑو نے سندھ ایگزیکٹو کمیٹی کے فیصلوں کے بارے میں آگاہ کیا۔ انہوں نے بتایا کہ 17 مئی کو نوابشاہ اور 21 مئی کو سکھر میں نواز شریف حکومت کے خلاف احتجاجی دھرنا دیا جائے گا افطار پارٹیوں میں پیپلز پارٹی اپنی بات لوگوں کے سامنے رکھے گی ۔ پارٹی کے طلباء ونگ پیپلز اسٹوڈنٹس فیڈریشن ( پی ایس ایف ) اور لیبر ونگ ، پیپلز لیبر بیورو کی تنظیم نو کے لیے کوآرڈی نیشن کمیٹی بنا دی گئی ہے ۔ پیپلز پارٹی طلباء تنظیموں کو بہت اہمیت دیتی ہے ۔ ہر ڈگری کالج کی سطح پر پی ایس ایف کے یونٹ قائم کیے جائیں گے ۔پیپلز پارٹی کی وارڈ کی سطح تک تنظیم کی جائے گی ۔ وارڈ پیپلز پارٹی کا بنیادی یونٹ ہو گا ۔ ہم وفاقی حکومت کو ڈھیٹ حکومت کہتے ہیں ۔ سپریم کورٹ کے دو ججوں نے فیصلہ دے دیا ہے کہ وزیر اعظم نواز شریف صادق و ا مین نہیں رہے جبکہ تین ججوں نے وزیر اعظم پر چارج شیٹ لگا کر جے آئی ٹی بنا دی ہے ۔ وزیر اعظم نواز شریف کو اس جے آئی ٹی میں 13 سوالوں کا جواب دینا ہو گا ۔ ان کے پاس وزیر اعظم رہنے کا کوئی اخلاقی جواز نہیں نواز شریف نے جب عدالت پر حملہ کیا تھا تو عدالت کو حملے کی ویڈیوز نظر نہیں آئیں ۔ 12 مئی کو بڑی تعداد میں بے گناہ لوگوں کو قتل کیا گیا تو عدالت خاموش ہے ۔

مزید :

صفحہ اول -