5کروڑ قرضہ کے 20سال پرانے مقدمہ کا فیصلہ سنا دیا گیا، دونوں ملزم بری

5کروڑ قرضہ کے 20سال پرانے مقدمہ کا فیصلہ سنا دیا گیا، دونوں ملزم بری

  

لاہور(نامہ نگار)بینک جرائم کورٹ پنجاب کے جج محمد ارشدعلی نے 20سالہ پرانے مقدمہ کا فیصلہ سناتے ہوئے 5 کر و ڑ لون کیس میں آصف سہگل اور عارف سہگل کو بری کردیا۔بینک جرائم کورٹ پنجاب کی عدالت میں 20 سال قبل مذ کو ر ہ ملزموں کیخلاف ایف آئی اے نے 1998 ء میں اے بی او بینک جو اب سٹنڈر چارٹربنک میں زم ہو چکا ہے کی جا نب سے مقدمہ درج کرایا گیا جس میں موقف اختیار کیا گیاتھا انہوں نے مہب ٹیکسٹائل مل گلبرگ کے نام پر 5کروڑ روپے کا لون لیا لیکن رقم واپس نہیں کی۔ مقدمہ درج ہونے کے بعد قانونی پیچیدگیوں کی وجہ سے عدالت میں التوا ء کا شکا ر رہا لیکن بنک کی طرف سے پیروی نہ کی گئی اور نہ کوئی گواہ پیش کیا گیا اس پر آصف سہگل اور عارف سہگل کے وکلا نے بری کرنیکی درخواست دی کہ ان کیخلاف کوئی گواہ تک نہیں ہے۔عدالت نے سٹینڈرچارٹربنک اور سلک بنک کے نما ئند و ں کو طلب کیا ،بعدازاں عدالت نے وکلا ء کے دلائل کے بعد آصف سہگل اور آصف سہگل کو بری کردیا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -