جوڈیشل اکیڈیمیز کے مستقبل کے حوالے سے 2روزہ گول میز کانفرنس

جوڈیشل اکیڈیمیز کے مستقبل کے حوالے سے 2روزہ گول میز کانفرنس

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی )پاکستان میں جوڈیشل اکیڈیمیز کے سکوپ اور مستقبل کے حوالے سے 2روزہ گول میز کانفرنس کا انعقا د کیا گیا ،افتتاحی تقریب سے خصوصی خطاب کرتے ہوئے جسٹس شجاعت علی خان نے کہا کہ جلد انصاف کی فراہمی کے لئے جوڈیشل ایجوکیشن بہت زیادہ اہمیت کی حامل ہے ۔کانفرنس کا اہتمام پنجاب جوڈیشل اکیڈمی لاہور اور یونائیٹڈ نیشنز آفس آف ڈرگس اینڈ کرائم نے باہمی اشتراک سے مقامی ہوٹل میں کیا تھا،کانفرنس میں پاکستان کی تمام جوڈیشل اکیڈمیز بشمول وفاقی جوڈیشل اکیڈمی،پنجاب جوڈیشل اکیڈمی، سندھ اور کے پی کے جوڈیشل اکیڈمیز کے نمائندوں کے علاوہ آئرلینڈ، ترکی، نیپال،ساؤتھ افریقہ، یونان، یونائیٹڈ نیشن سے ججز اور لیگل ایکسپرٹس کے علاوہ پنجاب کی ضلعی عدلیہ سے جوڈیشل افسران نے شرکت کی۔ افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے جسٹس شجاعت علی خان کا کہنا تھا کہ جوڈیشل ایجوکیشن جلد انصاف کی فراہمی کیلئے بہت ضروری ہے۔ انہوں نے چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ سید منصو ر علی شاہ کوخراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ ضلعی عدلیہ میں بیش قیمت اصلاحات لائی گئی ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -