ڈان لیکس دو اداروں کا نہیں قومی معاملہ، رات گئی بات گئی سے مسئلہ حل نہیں ہو گا: سراج الحق

ڈان لیکس دو اداروں کا نہیں قومی معاملہ، رات گئی بات گئی سے مسئلہ حل نہیں ہو ...

  

پشاور،چارسدہ(نیوز ایجنسیاں )امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہاہے حکومت کے چار سال پورے ہونے کے بعد حکمرانوں کی ز ند گی میں انقلاب آیا ہے،غریب عوام کو مہنگائی لوڈشیڈنگ ،بیروزگاری و بدامنی کے تحفے کے سوا ء کچھ نہیں ملا،رمضان المبارک سے پہلے پہلے لوڈ شیڈنگ و مہنگائی کاخاتمہ کیا جائے۔ گزشتہ روز خیبرپختونخوا کے مختصردورے کے دوران چارسدہ میں میڈیا اور المرکز الاسلامی پشاور میں جماعت اسلامی خیبرپختونخوا کے ذمہ داران ،صوبائی وزراء ،اراکین قومی وصوبائی اسمبلی کے مشترکہ اجلاس سے خطاب میں انکا مزید کہنا تھا چند لوگوں نے بند کمرے میں بیٹھ کر ایک دوسرے کو خاموش کیا ہے لیکن قوم کے ذہنوں میں اب بھی سوال ہے اتنے بڑے واقعہ کا اصل ذ مہ دار کون ہے، ڈان لیکس قومی مسئلہ ہے دو اداروں کا نہیں،رات گئی بات گئی سے ڈان لیکس کا مسئلہ حل نہیں ہوگا۔قوم اصل ذمہ داروں کا تعین چاہتی ہے۔ پاکستان کے ایران اورافغانستان سے تعلقات کی خرابی خارجہ پالیسی کی ناکامی ہے۔ بھارت چاہتا ہے پاکستان کے ایران اور افغانستان سے تعلقات کشیدہ رہیں اور یہ بھارت کی کامیابی ہے۔ پاکستان کا وزیر خارجہ نہیں اور جس ملک کا وزیر خارجہ نہ ہو اسکا نتیجہ یہی ہو گا۔سپیکر ایاز صادق کی قیادت میں پار لیما نی وفد نے افغانستان کا دورہ کیا جس کے بعد ناخوشگوار واقعات رونما ہو ئے اور دونوں ممالک کے تعلقات مزید خراب ہو گئے ہیں جو ا س با ت کی علامت ہے کہ اسلام آبادکے پاس وہ صلاحیت نہیں کہ اپنے پڑوسیوں کیساتھ تعلقات اچھے بنائے اور پاکستان کیلئے بیرونی محاذ پر جگہ بنا ئے۔ جندال کا ایسے ماحول میں ملاقات کرنا جب کلبھوشن پاکستان کے جیل میں ہے اور اس کو پھانسی کی سزا ہو ئی ہے جبکہ بھارت بین الاقوامی عدالتوں سے رجوع بھی کر رہا ہے اور پاکستان کیخلاف منفی پراپیگنڈوں میں مصروف عمل ہے تو ایسے حالات میں جندال کی وزیر اعظم سے خفیہ ملاقات کلبھوشن کی رہائی کے سواء کچھ نہیں۔ جندال کی ملاقات اور کلبھوشن کی رہائی بیک ڈورڈپلومیسی ہے یہ کام خود وزیر اعظم نہیں کر تا اس کے پیچھے اور بہت لوگ ہو تے ہیں،کنٹرول لائن پر بھارتی فوج کی بلاشتعال فائرنگ اور اس میں شہریوں کی زخمی ہونے کے واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے انکاکہنا تھا یہ واقعات ناقابل برداشت ہیں اور یہ پہلی دفعہ نہیں بھارت ایل او سی پر مسلسل بلااشتعال فائرنگ میں عام شہریوں کو نشانہ بنا رہا ہے،حکمران چار سال بعد بھی عوامی مسائل حل کرنے میں ناکام رہے، پوری دنیا میں مذہبی تہواروں کے مواقع پر عوام کو خصوصی ریلیف دیا جاتا ہے ، لیکن یہاں پر رمضان المبارک کے موقع پر بھی مہنگائی عروج پر پہنچتی ہے، حکومت رمضان المبارک کیلئے خصوصی ریلیف پیکج کا اعلان ، لوڈشیڈنگ خاتمے کیلئے لائحہ عمل طے کرے ، رمضان المبارک میں مہنگائی و لوڈشیڈنگ برداشت نہیں کرینگے ۔

مزید :

صفحہ آخر -