گوادر کی ترقی کیساتھ ہی دشمن کی نئی چال ، پاکستان اور ایران میں بڑے سونامی کے خطرے کا دعویٰ کردیا

گوادر کی ترقی کیساتھ ہی دشمن کی نئی چال ، پاکستان اور ایران میں بڑے سونامی کے ...
گوادر کی ترقی کیساتھ ہی دشمن کی نئی چال ، پاکستان اور ایران میں بڑے سونامی کے خطرے کا دعویٰ کردیا

  

اسلام آباد(ویب ڈیسک) گوادر کی ترقی اور دنیا کی نظریں پاک چین راہداری منصوبے پر جمنے کے ساتھ ہی دشمن نے نئی چال چل دی اور ایک تحقیق کو بنیاد بنا کر دعویٰ کیا گیا ہے کہ پاکستان اور ایران کی جنوبی ساحلی پٹی ایک بڑے سونامی کی زد میں ہے اورتیزی سے ہونیوالی ترقی سے زیادہ خطرات پیدا ہوگئے ہیں۔ 

روزنامہ خبریں کے مطابق ایک تحقیق میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ اس خطے میں عمانی اور پاکستانی ساحلی پٹیوں پر تیزی سے ترقیاتی منصوبوں پر کام ہو رہا ہے۔ آبادی بڑھ رہی ہے اور ساحل پر آباد بستیاں شہروں میں تبدیل ہو رہی ہیں۔ اس وجہ سے اور زیادہ لوگ سونامی کے خطرے کا سامنا کر رہے ہیں۔ گوادر پورٹ اور اس سے ملحقہ علاقے جہاں تیزی سے ترقیاتی کام ہو رہے ہیں 1945 میں زلزلے سے بری طرح متاثر ہو چکے ہیں۔جیوفیزیکل جرنل انٹرنیشنل کی اس تحقیق میں ماہرین نے اس خطے میں سیسمولوجی، جیوڈیسی اور جیومارفولوجی جیسی تکنیک استعمال کی ہیں۔مکران کا مشرقی حصہ پاکستان میں ہے جہاں 1945 میں 8.1 درجے کے زلزلے اور پھر سونامی کے نتیجے میں 300 افراد ہلاک ہوئے تھے۔ اس سونامی سے موجودہ پاکستان اور عمان متاثر ہوئے تھے۔

مزید :

اسلام آباد -