مینار پاکستان جلسے میں شرکت کرنیوالوں کیلئے سپیشل روٹ بنایاگیا

مینار پاکستان جلسے میں شرکت کرنیوالوں کیلئے سپیشل روٹ بنایاگیا

  

لاہور(خبرنگار)متحدہ مجلس عمل کے مینار پاکستان گراونڈ میں ہونے والے جلسے میں شرکت کرنے والے ہزاروں افراد کو جلسہ گاہ تک پہنچانے کے لئے سپیشل روٹ بنایاگیا۔اور اس میں پولیس نے ایمر جنسی کی صورت میں کسی بھی روڈ کو بلاک کرنے کے لئے شیراوالہ گیٹ کے باہر مین روڈ پر کئی ٹرالے اور کنٹینر بھی کھڑے کر رکھے تھے۔جلسہ گاہ کی سکیورٹی کے لئے آپریشن پولیس کے تین ایس پیز دس ڈی ایس پییز سمیت ہزاروں پولیس اہلکاروں کی ڈیوٹی لگائی گئی۔جلسہ گاہ کے ارد گرد پولیس نے اونچی مچانیں لگا کر بھی اوپر پولیس اہلکار تعینات کر رکھے تھے۔ایم ایم اے کے جلسہ میں شرکت کرنے کے لئے پنجاب کے علاوہ دوسرے صوبوں سے بھی بڑی تعداد میں بسیں ،ویگنیں اورگاڑیاں لاہور پہنچیں۔ہزاروں گاڑیوں اور بسوں کو کھڑا کرنے کے لئے خصوصی اسٹینڈ بھی بنائے گئے۔اس کے باوجود کئی سڑکوں کے کنارے درجنوں بسیں کھڑی نظر آئیں۔ پولیس نے قناتیں لگا کر سکیورٹی اہلکار کھڑے کردئیے تاکہ پل کے اوپر سے کوئی شخص کھڑا ہوکر دہشت گردی یا فائرنگ نہ کرسکے۔متحدہ مجلس عمل کے جلسہ کی سکیورٹی کے لئے جماعت اسلامی اور دوسری شریک دینی جماعتوں کے ورکروں نے بھی سکیورٹی کا حصار بنارکھا تھا۔ ٹھنڈے پانی کی سبیلیں بھی لگائی گئیں۔جلسہ گاہ میں جماعت اسلامی ،جمیعت علمائے اسلام اور جمیعت علمائے پاکستان کے ورکرز کی تعداد کافی زیادہ تھی۔

سپیشل روٹ

مزید :

صفحہ آخر -