وزیراعظم کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ختم، عسکری قیادت کا نوازشریف کے بیان پر شدید تحفظات کا اظہار

وزیراعظم کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ختم، عسکری قیادت کا ...
وزیراعظم کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ختم، عسکری قیادت کا نوازشریف کے بیان پر شدید تحفظات کا اظہار

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ختم ہو گیا جس میں چیئرمین  جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، ایئر چیف مجاہد انور خان ، نیول چیف ایڈمرل ظفر محمود عباسی، آئی ایس آئی ، آئی بی ، ایم آئی کے سربراہان،وزیر دفاع، خارجہ سمیت دیگر نے شرکت کی ،اجلاس میں عسکری قیادت کی جانب سے سابق وزیراعظم نوازشریف کے بیان پر تحفظات کا اظہار کیا گیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق نوازشریف کے ممبئی حملوں سے متعلق متنازع بیان پر وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اہم اجلاس ہوا جو دو گھنٹے جاری رہا اجلاس میں چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، ایئر چیف مجاہد انور خان ، نیول چیف ایڈمرل ظفر محمود عباسی، آئی ایس آئی ، آئی بی ، ایم آئی کے سربراہان،وزیر دفاع، خارجہ سمیت دیگر نے شرکت کی ،اجلاس میں نوازشریف کے حالیہ متنازع بیان سے پیداہونےوالی صورتحال پر بات چیت ہوئی ،عسکری قیادت کی جانب سے ممبئی حملوں سے متعلق بیان پرشدید تحفظات کا اظہار کیا گیا،اجلاس کا اعلامیہ کچھ دیر بعد جاری کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ چند دن قبل نواز شریف نے مقامی اخبار ”ڈان“کے صحافی سرل المیڈا کو انٹر ویو دیتے ہوئے کہا تھا کہ ممبئی حملوں کے مقدمے کی کارروائی ابھی تک مکمل کیوں نہیں ہوسکی؟ ، عسکری تنظیمیں اب تک متحرک ہیں جنہیں غیر ریاستی عناصر کہا جاتا ہے، مجھے سمجھائیں کہ کیا ہمیں انہیں اس بات کی اجازت دینی چاہیے کہ سرحد پار جا کر ممبئی میں 150 لوگوں کو قتل کردیں۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -اہم خبریں -