سیالکوٹ میں مرزا غلام قادیانی آنجہانی خفیہ یاد گار کی تعمیر

سیالکوٹ میں مرزا غلام قادیانی آنجہانی خفیہ یاد گار کی تعمیر
سیالکوٹ میں مرزا غلام قادیانی آنجہانی خفیہ یاد گار کی تعمیر

  

لاہور( ویب ڈیسک ) سیالکوٹ میں قادیانیوں کی جانب سے قادیانی جماعت کے پیشوا مرزا غلام قادیانی آنجہانی کی یادگار تعمیر کیے جانے والے عجائب گھر کا تعمیراتی کام ایک سال سے خفیہ طور پر جاری رہنے پر مجلس احرار اسلام پاکستان کے سیکرٹری جنرل عبداللطیف خالد چیمہ نے اس پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ قادنیوں کو سرکاری سطح پر اثرورسوخ حاصل ہونے کی وجہ سے وہ اس قسم کی ارتدادی سرگرمیوں میں مصروف ہیں ،انہوں نے کہا کہ قادیانی 74ءکی قرار داد اقلیت اور 84ءکے امتناع قادیانیت ایکٹ کی روشنی میں کسی قسم کی تبلیغی وارتدادی سرگرمیوں جاری نہیں رکھ سکتے ۔

روزنامہ خبریں کے مطابق انہوں نے کہا کہ علامہ اقبال منزل کے قریب مسلمانوں کی آبادی کے عین و سط میں اگر یہ ارتدادی سلسلہ جاری رہا تو ہولناک کشیدگی جنم لے گی اور پیش آمدہ حالات کی ذمہ داری قادنیوں اور سرکاری انتظامیہ پر عائد ہوگی اور پھر یہ تشویش ناک صورت حال پورے صوبے کو اپنی لپیٹ میں لے لے گی ، انہوں نے مطالبہ کیا کہ سرکاری انتظامیہ قادیانیوں کو قانون کے دائرے میں رہنے کا پابند بنائے ۔

عبداللطیف خالد چیمہ نے ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کی قرار دادوں کی مکمل تائید کرتے ہوئے کہا کہ اگر صورت حال کو قانون کے مطابق نہ سنبھالا گیا اور قادیانیوں کو قانون کے دائرے میں رہنے کا پابند نہ بنایا گیا تو متحدہ تحریک ختم نوبت رابطہ کمیٹی پاکستان پنجاب کی سطح پر احتجاج کا اعلان کرے گی۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -