ممبئی حملہ’را‘کا اسٹنگ آپریشن تھا، نواز شریف آج ہی پریس کانفرنس کر کے اپنا بیان واپس لے لیں:رحمان ملک

ممبئی حملہ’را‘کا اسٹنگ آپریشن تھا، نواز شریف آج ہی پریس کانفرنس کر کے اپنا ...
ممبئی حملہ’را‘کا اسٹنگ آپریشن تھا، نواز شریف آج ہی پریس کانفرنس کر کے اپنا بیان واپس لے لیں:رحمان ملک

  

اسلا م آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق وزیر داخلہ سینیٹررحمان نے کہا ہے کہ نواز شریف قوم پر رحم کریں اور اپنا بیان واپس لے لیں ۔ممبئی حملہ’را‘کا اسٹنگ آپریشن تھا،اس وقت کے بھارتی وزیرداخلہ سے کہا کہ ثبوت دیں ایکشن لوں گا۔

پریس کانفرنس کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ نے کہا کہ انکی پریس کانفرنس کسی کے خلاف نہیں ہے، ممبئی حملہ کیس کی تحقیقات کیلیے جے آئی ٹی بنائی۔میری پریس کانفرنس میں کوئی الزام تراشی نہیں ہوگی۔انہوں نے کہا کہ نان اسٹیٹ ایکٹر وہ ہوتاہے جس کو حکومت کی پشت پناہی نہیں ہوتی۔ممبئی حملہ’را‘کا اسٹنگ آپریشن تھا،اس وقت کے بھارتی وزیرداخلہ سے کہا کہ ثبوت دیں ایکشن لوں گا۔

رحمن ملک نے کہا کہ ممبئی حملہ پورا کا پورا ’را‘نے کروایا، بھارت ہمارے ملک میں دہشت گردی کراتا ہے۔ممبئی حملہ کیس کی تحقیقات بھارت کی وجہ سے رکی ،نواز شریف کے بیان سے افسوس ہوا۔بھارت اپنے ریاستی عناصر بھیج کر پاکستان میں دہشت گردی کراتا رہا ہے،نوازشریف نے یہ بیان دیاہے تو اقوام متحدہ کے طلب کرنے پر وہ کیا کہیں گے؟

انہوں نے کہا کہ ڈیوڈ ہیڈلے کے سنڈیکیٹ کو بھارت کی خفیہ ایجنسی نے تیار کیا،اجمل قصاب کا بیان رکارڈ کرانے کی اجازت نہیں دی گئی۔اجمل قصاب بھی بھارت کا اپنا مہرہ تھا،اس لیے رسائی نہیں دی گئی۔نواز شریف قوم پر رحم کریں ،اور اپنا بیان واپس لیں۔ میاں صاحب ، آج ہی پریس کانفرنس کریں اور اپنا بیان واپس لیں،آج میاں صاحب نے پہلی مرتبہ بھارتی جاسوس کلبھوشن کے خلاف بیان دیا۔

سابق وزیر داخلہ نے کہا کہ میاں صاحب، قوم کے سامنے کہیں کہ غلطی ہوئی، کلبھوشن جادھو تو بھارت کا سرونگ افسر تھا، یہ ہوتا ہے اسٹیٹ ایکٹر۔ مقبوضہ کشمیرمیں ظلم و بربریت پرسے توجہ ہٹانے کیلیے بھارت نے خودممبئی حملہ کرایا۔انہوں نے مزید کہا کہ کسی پرالزام نہیں لگارہا،ملکی مفاد میں کہہ رہاہوں میاں صاحب اپنا بیان واپس لیں ۔پاکستان کسی بھی طرح ممبئی حملہ کیس میں ملوث نہیں۔

رحمن ملک نے کہا کہ نوازشریف کا بیان انتہائی غیرذمے دارانہ اور بچگانہ ہے،نواز شریف کا بیان ملک کو مشکلات میں ڈال سکتا ہے۔ ریاست پاکستان کاممبئی حملوں میں کوئی کردارنہیں،ان حملوں کی بھرپورمذمت کی تھی۔حافظ سعید ان حملوں میں ملوث نہیں پایا گیا تھا۔نواز شریف بریفنگ لیں تاکہ وہ اسٹیٹ اور نان اسٹیٹ ایکٹر میں فرق واضح ہو۔

انہوں نے کہا کہ کلبھوشن کے معاملے پرتاخیر ہوئی تو بھارت بین الاقوامی عدالت میں چلا گیا،میں نے پہلے روز ہی کہاتھا ممبئی حملہ کیس میں بھارت ملوث ہے۔الزام تراشی کا سلسلہ بندکیا جائے، بحیثیت قوم ہمیں متحد ہونے کی ضرورت ہے۔ہم نے ہر عدالتی حکم کو تسلیم کیا،ہمیں بھارت جیسے دشمن کےخلاف متحد ہونے کی ضرورت ہے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -