وزیر داخلہ سروسز ہسپتال سے ڈسچارج،عیادت کے لئے آنے والوں کے شکر گزار

وزیر داخلہ سروسز ہسپتال سے ڈسچارج،عیادت کے لئے آنے والوں کے شکر گزار
 وزیر داخلہ سروسز ہسپتال سے ڈسچارج،عیادت کے لئے آنے والوں کے شکر گزار

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کو سروسز ہسپتال سے ڈسچارج کر دیا گیا،اپنے پیغام میں انہوں نے عیادت اور ان کو دعاوں میں یاد رکھنے پر سب کا شکریہ ادا کیا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کو لاہور کے سروسز ہسپتال سے ڈسچارج کردیا گیا،ہسپتال سے باہر آنے کے بعد انہوںنے قومی پرچم بھی لہرایا۔

ایک ویڈیو پیغام میں احسن اقبال کا کہنا تھا کہ میری صحت کیلئے فکر مند رہنے والے افراد کا شکریہ ادا کرتا ہوں، ان کا کہنا تھا کہ میں جسم میں تمام زندگی کیلئے وہ گولی لے کر جا رہا ہوں، جو مجھے یاد دلاتی رہے گی کہ ہمیں پاکستان کو امن کا گہوارہ بنانے کیلئے ابھی کتنا کام کرنا ہے۔

خیال رہے احسن اقبال نو روز تک سروسز ہسپتال میں زیر علاج رہے جہاں ان کے بازو کا آپریشن ہوا اور پیٹ کی لیپروسکوپی کی گئی۔

یاد رہے کہ وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کو 6 مئی کو اس وقت نشانہ بنایا گیا جب وہ نارووال میں پارٹی کی کارنر میٹنگ کے بعد واپس جا رہے تھے۔ وزیر داخلہ احسن اقبال واپس جانے لگے تو ملزم عابد نے انتہائی قریب سے 30 بور کی پستول سے فائر کیا۔ گولی احسن اقبال کے دائیں بازو کو لگی اور پیٹ میں پیوست ہو گئی تھی جو ابھی بھی ان کے جسم میں موجود ہے۔

۔۔۔ویڈیو پیغام دیکھیں۔۔۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -