آل پارٹیز کانفرنس میں سیاسی جماعتوں کا تعلیم میں بہتری لانے کے عزم کا اعادہ

آل پارٹیز کانفرنس میں سیاسی جماعتوں کا تعلیم میں بہتری لانے کے عزم کا اعادہ
آل پارٹیز کانفرنس میں سیاسی جماعتوں کا تعلیم میں بہتری لانے کے عزم کا اعادہ

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کے تمام بچوں کو معیاری تعلیم فراہم کرنے کے عزم کا اعادہ کرنے کیلئے تقریباً تمام سیاسی جماعتوں کی قیادت اسلام آباد میں جمع ہوئی۔ اعلانِ عمل کے نام سے منعقد ہونے والی اس کانفرنس میں پاکستان مسلم لیگ ن ، پاکستان پیپلز پارٹی، پاکستان تحریک ِانصاف، نیشنل پارٹی) این پی(، عوامی نیشنل پارٹی)اے این پی(، جماعت ِاسلامی، قومی وطن پارٹی )کیو ڈبلیو پی(، پاک سر زمین پارٹی ) پی ایس پی(، ایم کیو ایم پاکستان، پاکستان مسلم لیگ کیو، جمیعت علمائے اسلام ف، پشتونخوا ملی عوامی پارٹی اور بی این پی۔ مینگل کی قیادت نےتمام سیاسی اختلافات کو پسِ پشت ڈالتے ہوئے قومی تعلیمی اصلاحات کےبنیادی ایجنڈے پر اتفاق کرنے کا عہد کیا ہے۔

تعلیمی مہم الف اعلان کی جانب سے منعقد کی جانے والی اس کانفرنس میں پنجاب کے وزیر برائے اسکول ایجوکیشن رانا مشہود، خیبرپختونخواہ کے وزیرِ تعلیم محمد عاطف خان، عوامی نیشنل پارٹی کے افرسیاب خٹک اور سردار حسین بابک، پاکستان تحریک ِ انصاف کے چوہدری محمد سرور، پاکستان پیپلز پارٹی کی ایم این اے ڈاکٹر عذرا پیچوہو، ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر خالد مقبول صدیقی اور فیصل سبزواری، جمیعت علماءاسلام کے ایم پی اے نور سلیم خان، بی این پی مینگل کے سینیٹر ڈاکٹر جہانزیب جمالدینی، پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے سینیٹر عثمان کاکڑ، پاک سرزمین پارٹی کے جنرل سیکرٹری رضا ہارون، قومی وطن پارٹی کی ایم پی اے انیسہ زیب طاہر خیلی ،نیشنل پارٹی کے سینیٹر محمد اکرم اور پاکستان مسلم لیگ کے مرکزی نائب صدر اجمل وزیر خان نے شرکت کی۔

مزید :

قومی -