بوڑھے پنشنروں کی بائیو میٹرک تصدیق

بوڑھے پنشنروں کی بائیو میٹرک تصدیق

مکرمی جناب!مَیں ایک اہم مسئلہ کی طرف توجہ مبذول کروانا چاہتا ہوں کہ اسٹیٹ بنک آف پاکستان چٹھی نمبر20، 2017ء مورخہ4 جون 2017ء تمام بنک اور مالیاتی اداروں کو بائیو میٹرک کا پابند بنا دیا گیا ہے۔ بنک حکام نے اس چٹھی کا اطلاق ریٹائرڈ ملازمین(مرد و خواتین) پر کرنا شروع کر دیا ہے۔ سرکاری ریٹائرڈ ملازمین جب ماہانہ پنشن کے لئے متعلقہ بنک جاتے ہیں تو اس کی بائیو میٹرک کی جاتی ہے جو اکثر نہیں ملتی۔ اُس کی وجہ ایک تو بڑھاپا، جس کی وجہ سے انگلیوں کے نشان مرہم ہ جاتے ہیں۔ حالانکہ ان کے شناخی کارڈ پر تاحیات لکھا ہے۔ بنک حکام اُن پنشنرز مرد و خواتین، بیوہ عورتوں کو نادرا بھیج دیتے ہیں، نادرا حکام انہیں اسٹیٹ بنک کی چٹھی جس کا ذکر اوپر کیا گیا ہے دے کر واپس بھیج دیتے ہیں،مگر بنک حکام نہیں مانتے اور پنشنرز کی بہت بڑی تعداد کو دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ مہربانی فرما کر اس کا تدارک کروایا جائے۔ شوکت علی پنشنر، محمد نگر(گڑھی شاہو) لاہور

مزید : رائے /اداریہ