3 سالہ بچی کے ساتھ جنسی زیادتی نے کشمیریوں کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا، عوام سڑکوں پر

3 سالہ بچی کے ساتھ جنسی زیادتی نے کشمیریوں کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا، عوام سڑکوں ...
3 سالہ بچی کے ساتھ جنسی زیادتی نے کشمیریوں کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا، عوام سڑکوں پر

  

سری نگر(مانیٹرنگ ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں ایک 3سالہ بچی کے ساتھ جنسی زیادتی نے کشمیریوں کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا اور ہزاروں لوگ سڑکوں پر نکل آئے۔ میل آن لائن کے مطابق ملزم ایک کار مکینک اور متاثرہ بچی کا ہمسایہ تھا جو ورغلا کر اسے قریب واقع سکول میں لے گیا اور وہاں ٹوائلٹ میں اسے اپنی ہوس کا نشانہ بناڈالا۔ واقعے کی خبر جنگل کی آگ کی طرح وادی میں پھیل گئی اور ہزاروں لوگ سڑکوں پر نکل آئے۔ اس دوران پولیس کے ساتھ مشتعل مظاہرین کی جھڑپوں کی خبریں بھی آ رہی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق بچی کے ساتھ زیادتی کا واقعہ ’ملک پورہ‘ نامی قصبے میں پیش آیا۔ جس کے خلاف پورے کشمیر میں مظاہرے شروع ہوئے جو جلد ہی پرتشدد صورتحال اختیار کر گئے۔مظاہرین پولیس پر پتھراﺅ کر رہے ہیں جبکہ پولیس کی طرف سے ان پر آنسو گیس پھینکی جا رہی ہے اور پیلٹ گنوں سے انہیں نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ مظاہرین کا ایک ہی مطالبہ ہے کہ بچی کے ساتھ زیادتی کے ملزم کو پھانسی دی جائے۔ رپورٹ کے مطابق ملزم کی عمر 20سال کے لگ بھگ ہے اور اسے گرفتار کیاجا چکا ہے۔تاہم ایک سکول کے پرنسپل کی طرف سے ملزم کی عمر 13سال قرار دینے پر مظاہرین مشتعل ہیں اور اسے ملزم کو پھانسی سے بچانے کی کوشش قرار دے رہے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی