سمندر پار پاکستانی ہمارا اثاثہ ہیں،حکومت کورونا وائرس کے دوران عوام کو ریلیف فراہم کرنے کی ہر ممکن کوشش کررہی ہے:علی امین گنڈا پور

سمندر پار پاکستانی ہمارا اثاثہ ہیں،حکومت کورونا وائرس کے دوران عوام کو ...
سمندر پار پاکستانی ہمارا اثاثہ ہیں،حکومت کورونا وائرس کے دوران عوام کو ریلیف فراہم کرنے کی ہر ممکن کوشش کررہی ہے:علی امین گنڈا پور

  

نیویارک (ڈیلی پاکستان آن لائن)کشمیر اور گلگت بلتستان امور کے وفاقی وزیر علی امین گنڈا پور نے کہاہے کہ حکومت کورونا وائرس کے دوران عوام کو ریلیف فراہم کرنے کی ہر ممکن کوشش کررہی ہے،دیہاڑی دار طبقہ اور چھوٹے پیمانے پر کام کرنے والے سب سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں،احساس پروگرام کے تحت بیشتر لوگوں کو 12 ہزار روپے فی کس مل چکے ہیں،سمندر پار پاکستانی ہمارا اثاثہ ہیں انہوں نے ہر مشکل وقت میں پاکستان اور عوام کا ساتھ دیا ہے اورکورونا کے باعث معاشی مشکلات سے دوچار پاکستان کی مدد بھی کریں گے،وزیراعظم عمران خان سمندر پار پاکستانیوں کی بہت قدر کرتے ہیں اور نکی اہمیت کو سمجھتے ہیں، وہ کشمیری عوام کے لئے دل میں درد رکھتے ہیں انہوں نے کشمیر کا سفیر بن کر گزشتہ سال اقوام متحدہ میں کشمیر کا مقدمہ بہترین طریقے سے لڑا تھا،اس سال اقوام متحدہ کا سالانہ اجلاس میں کشمیر کے لئے فیصلہ کن ثابت ہوگا.

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستان تحریک انصاف کے امریکہ میں سینیئر اور متحرک رہنماؤں کے زیر اہتمام زوم کے ذریعے ویڈیو کانفرنس سے خطاب اور شرکا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔زوم ویڈیو کانفرنس کا اہتمام چوہدری پرویز ریاض، عمران ناگرہ، مرزا خاور بیگ،ضمیر چوہدری، عدیل گوندل اور چوہدری عبدالمالک نے کیا تھا . ہیوسٹن میں پاکستانی قونصل جنرل ابرار ہاشمی،گلگت بلتستان اسمبلی کی رکن رانی زہرہ،گلگت بلتستان میں ریلیف کاموں میں مصروف عمل تنظیم کے علاوہ امریکی کشمیری رہنماں غزالہ حبیب، ملک ندیم عابد، ڈاکٹر آصف الرحمان، مسٹر عاطف، مہرین علی، امریکن پاکستانی پبلک ایڈووکیسی گروپ کے علی رشید اور امین غنی، ہیلپنگ ہینڈ کے مسٹر الیاس اور دیگر شامل تھے. اس اہم آن لائن ورچوئل کانفرنس میں میڈیا کے نمائندے بھی موجود تھے. علی امین پور گنڈا پور نے قونصل جنرل سمیت مختلف شخصیات کے کمنٹس اور میڈیا سمیت دیگر کی جانب سے سوالوں کے جواب دئے انہوں نے کمیونٹی خصوصا امریکن پاکستانی کشمیریوں کو یقین دلایا کہ وزیراعظم عمران خان دنیا بھر میں کشمیر کا مقدمہ بہت جاندار انداز سے اور دل سے لڑ رہے ہیں وہ عالمی رہنماوں سے مقبوضہ میں لاک ڈان پر مسلسل رابطے میں ہیں کیونکہ بھارت اب کورونا کی آڑ میں لاک ڈان میں مذید سختیاں کررہا ہے انکے علاوہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور میں بھی امور کشمیر کے وزیر کی حیثیت سے اپنی ذمہ داری نبھارہے ہیں.

انہوں نے کہا کہ ھم کشمیر کا مسئلہ اقوام متحدہ سمیت تمام بین الاقوامی فورموں پر اٹھاچکے ہیں. ویڈیو کانفرنس میں ماڈریٹنگ کے فرائض پرویز ریاض اور عمران اگرہ نے انجام دئیے انکے علاوہ ضمیر چوہدری اور خاور بیگ نے بھی شرکا کانفرنس کا تعارف اور میٹنگ کےاغراض و مقاصد بیان کئے.وفاقی وزیر نےکورونا کے بعد بحالی کے لئے حکمت عملی کے حوالے سے بھی سوالات بھی پوچھے گئے. وزیر علی امین گنڈا پور نے معاشی بحالی اور کاروباری طبقوں کے لئے حکومتی منصوبوں کے بارے میں تفصیل سے آگاہ کیا. زوم ویڈیو میٹنگ بہت کامیاب رہی جس کا سہرا عمران ناگرہ، پرویز ریاض، خاور بیگ، ضمیر چوہدری، عبدالمالک اور عدیل چوہدری کے سر جاتا ہے جنہوں نے اس پہلیوزیراعظم کے مشیر زلفی بخاری کے ساتھ اس نوعیت کی اولین ورچوئل ویڈیو کانفرنس کے ذریعے کمیونٹی کو کورونا سے متاثر پاکستانی کمیونٹی کے لئے حکومتی اقدامات سے آگاہ کیا تھا.خاص طور سے پی آئی اے کے امریکہ کے لئے پروازوں کے آغاز کے سلسلے میں بھی بات ہوئی تھی۔

مزید :

تارکین پاکستان -