مذہبی تنظیموں نے مدار س، مساجد، مزارات پر پابندیاں غیر منصفانہ قرار دیدیں

      مذہبی تنظیموں نے مدار س، مساجد، مزارات پر پابندیاں غیر منصفانہ قرار ...

  

لاہور (آن لائن) سنی تنظیمات،مدارس کامشترکہ پلیٹ فارم تحفظ نامو س رسالت محاذ کی طرف جاری مشترکہ اعلامیہ میں کوروناو ائرس کے با عث مدارس، مساجد اور مزارات پر حکو متی پابندیوں کوغیرمنصفانہ قرار دیتے ہوئے کہاکہ رمضان المبارک کے آخری عشرہ میں شہادت حضرت علیؓ،تقریبات نزول قرآن،محافل شبینہ،جمعۃ الوداع اورعید الفطر بھرپو ر ا ند ا ز میں منایا جائیگا۔اگر حکومتی اداروں نے ہمارے علماء، آئمہ، مساجد کی انتظامیہ کو پریشان یا ہراساں کرنے کی کوشش کی تو تحریک چلائیں گے۔ لاک ڈاؤن میں نرمی کر کے نہ صرف شہریوں کو کورونا وائرس کے سامنے بے بس چھوڑ دیا گیاہے۔ان خیالات کااظہار گزشتہ روز جامعہ رسولیہ شیرازیہ بلال گنج لاہور میں تحفظ ناموس رسالت محاذ لاہور کا اہم ہنگامی اجلا س کے بعد جاری مشترکہ اعلامیہ میں کیا۔یہ اعلامیہ جماعت اہل سنت پاکستان، مرکزی جماعت اہل سنت،سنی اتحاد کونسل، جمعیت علمائے پاکستان (نورانی)، پاکستان سنی تحریک مجلس علماء اہل سنت لاہور، انجمن اشاعت دین اسلام، تحریک دعوت حق، بزم مشتاقان رسول، جامعہ نعیمیہ، جامعہ حنفیہ، جامعہ رسولیہ شیرازیہ، جامعہ محمدیہ غوثیہ، فخر العلوم علماء کونسل، نعیمین ایسوسی ایشن، انوار مدینہ، مصطفا ئی تحریک، تنظیم اتحاد امت پاکستان، محافظان ختم نبوت اور تحریک فدایان ختم نبوت دیگر سنی جماعتوں کی متفقہ مشاورت سے جاری کیا گیا۔ اجلاس میں علامہ رضائے مصطفی نقشبندی، ڈاکٹر راغب حسین نعیمی، مولانا عبداللہ ثاقب، مفتی عمران حنفی،مولانا محمد علی نقشبندی،مولانا نعیم جاوید نوری، علامہ رب نواز حقانی، علامہ طاہر شہزاد، مفتی مسعود الرحمن، مفتی انوار، ارشد نعیمی، مفتی قیصر، پیر بشیراحمد یوسفی، شفیق اللہ اجمل، رمضان فیضی سمیت دیگر علماء کرام نے شرکت کی۔ اجلاس میں کورونا وائرس کے حوالے سے علماء نے شدید تنقیدکی اور کہا اب جبکہ کورونا کو کنٹرول کرنے کا وقت آیا تھا،توحکومت نے عوام کوکرونا وائرس کے رحم وکرم پرچھوڑ دیا، اس سے قبل مدارس کے امتحانات، بزرگان دین کے عرس، معراج النبی، شب برا ت کے پروگرام پر پابندی لگائی گئی اور مزارات کو بند کر دیا گیا، یہ پابندی طوعا وکرھا قبول کی گئی، حکومتی ایس او پیز میں وضو خانہ پر پا بند ی نہ تھی لیکن وہ بھی بند کروا دیئے گئے، اہل سنت نے ان تمام پابندیوں کو ملکی حالات کے پیش نظر قبول کیا لیکن اب اہلسنت کی نمائندہ تنظیم تحفظ ناموس رسالت محاذ لاہور اہل سنت کے علماء اور مساجد انتظامیہ کو رمضان المبارک کے آخری عشرہ کے بارے میں رہنمائی کرتے ہیں کہ مساجد کے وضو خانے کھول دیئے جائیں۔ 21 رمضان المبارک کو شہادت حضرت علیؓ مساجد میں انتہائی عقیدت و احترام سے منائی جائے۔ آخری عشرہ کے جملہ دینی و روحانی پروگرامز شب قدر، جمعۃ الوداع، ختم قرآن پاک اور عیدالفطر کے پروگرام بھی پورے مذہبی جوش و جذبے سے منعقد کئے جائیں۔اجلاس میں عید الفطر کے بعد مدارس دینیہ کو شیڈول کے مطابق کھولنے پر بھی غورکیا گیا۔

مذہبی تنظیمیں

مزید :

صفحہ آخر -