کورونا وائرس سے متعلق معلومات یو ایم ٹی کے جرنلز میں شائع

  کورونا وائرس سے متعلق معلومات یو ایم ٹی کے جرنلز میں شائع

  

لاہور (کامرس ڈیسک) یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈٹیکنالوجی (یو ایم ٹی) کے سکول آف سائنس کے ایسوسی ا یٹ پروفیسر ا ور ڈیپارٹمنٹ آف لائف سائنسسز کے چیئر مین ڈاکٹر سہیل افضل اپنی ٹیم کے ہمراہ کرونا وائرس کے حوالے سے درپیش مسائل سے نمٹنے میں اپنا بھر پور کردار ادا کر رہے ہیں۔ ڈاکٹر سہیل افضل اور انکی تحقیقی ٹیم موجودہ وبائی بیماری کے دیگر پہلوؤں پر کام کر رہے ہیں جس کے نتیجے میں تین مقالاجات بین الاقوامی سطح پر شائع ہو چکے ہیں جبکہ متعدد قابل غور ہیں۔ حالیہ آرٹیکلز SARS-CoV-2، خفیہ کیریئر اور بلڈ ٹرانسفیوژن کے نام سے کورونا وائرس کے حوالے سے تحقیقی آ رٹیکلز نامور میڈیکل وائر ولوجی کے جرنل میں شائع کیے گئے ہیں۔1977میں قائم کیا گیا میڈیکل وائرو لوجی ایک مشہور جرنل ہے۔ یہ جرنل متعدی امراض کے حوالے سے Q2 کیٹگری میں شامل ہوتا ہے۔ ڈاکٹر سہیل افضل کا کہنا تھا کہ یہ شائع ہونے والے آرٹیکلز ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن(WHO) کو بھی پیش کیے جائیں گے تا کہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی روک تھام کے حوالے سے اہم اقدامات کیے جا سکیں۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ بین الاقوامی شہرت یافتہ میڈیکل وائرولوجی جرنل میں یو ایم ٹی کے آرٹیکلز کا شائع ہونا یو ایم ٹی کے لیے باعثِ فخر ہے۔ڈاکٹر سہیل کا مزید کہنا تھا کہ "کرونا وائرس کے پھیلاؤ (2019-nCoV) " اور COVID-19" کی وجہ سے مرتب معاشی اثرات " کے حوالے سے دو آرٹیکلز نامور بین الاقوامی پبلیشر " ایلسیویر " نے شائع کیے ہیں۔ یہ جرنلز متعدی امراض کے حوالے سے Q1 کیٹگری میں شامل ہوتے ہیں جن کا امیکٹ فیکٹر 4.8 ہے۔

شائع ہونے والے آرٹیکلز لائف سائنسسز کے مختلف شعبہ جات کے ساتھ ساتھ کرونا وائرس کی وجہ سے درپیش مسائل پر بھی روشنی ڈالتے ہیں۔

انکا یہ بھی کہنا تھا کہ یہ تحقیقی آرٹیکلز کرونا وائرس کی صورتحال سے نمٹنے کیلیئے فیصلہ سازی میں بے حد مدد گار ثابت ہونگے۔

صدر یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی (یو ایم ٹی) ابراہیم حسن مرادنے اس کامیابی کے موقع پر پروفیسر ڈاکٹر سہیل افضل اور انکی ٹیم کو مبارکباد پیش کی۔ ابراہیم حسن مراد نے اپنے خیالات کا اظہار کرت ہوئے کہا کہ یو ایم ٹی کروانا کی موجودہ صورتحال سے نمٹنے کیلیئے اپنا قلیدی کردار ادا کر رہی ہے۔حال ہی میں صدر یو ایم ٹی نے علم فنڈ کے ذریعے مستحق طلباء کو اسلامی اصولوں پر مبنی سود سے پاک قرض حسنا کی مد میں کروڑوں روپے دینے کا اعلان بھی کیا ہے۔

مزید :

کامرس -