تنخواہوں کی عدم ادائیگی‘ ٹاؤن کمیٹی دھنوٹ ملازمین کی ہڑتال جاری

تنخواہوں کی عدم ادائیگی‘ ٹاؤن کمیٹی دھنوٹ ملازمین کی ہڑتال جاری

  

دھنوٹ(نمائندہ خصوصی)ٹاؤن کمیٹی دھنوٹ کے ملازمین کی چھٹے روز بھی ہڑتال جاری رہی۔کوئی ذمہ دار افسر حال تک پوچھنے نہ آیا۔تفصیل کے مطابق 4ماہ تک مختلف افسران سے اپیلیں کر کر کے تھک گئے تو مجبوراً ہڑتال کرنا پڑی۔چھ روز گزر جانے کے بعد تک بھی کسی ذمہ دار افسر نے ہمارا حال تک نہیں پوچھا۔یوں لگتا ہے کہ بنیادی سطح پر ہماری صفائی کی کارکردگی (بقیہ نمبر35صفحہ7پر)

پر اعلیٰ افسران سے شاباش لینے افسران نے درجہ چہارم کے ملازمین کو اچھوت سمجھا ہوا ہے۔ ہمارے گھروں میں بھوک ناچ رہی ہے۔بھوک اور افلاس سے ہمارا برا حال ہے۔ سحری،افطاری کیلئے کچھ بھی نہیں ہے۔روزے بھی نہیں رکھے جا سکتے۔عید سر پر ہے اور اپنے بچوں کی توتلی زبان میں کی گئی فرمائشیں پوری نہ کر سکنے پر دل خون کے آنسو روتا ہے۔ان خیالات کا اظہارمحمد اقبال عرف نتھا،لیاقت،اللہ بخش،عاصم،نذیر احمد،الطاف حسین،مصور نورودیگرہڑتالی سینیٹری ملازمین نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ جب تک ہماری تنخواہیں جاری نہیں ہوتیں ہم ہڑتال جاری رکھیں گے۔دریں اثناء مرکزی انجمن تاجران دھنوٹ کے صدر حاجی گلزار حسین مغل نے ہڑتال کرنے والے ملازمین سے ملاقات کر کے ان کے مسائل پوچھے اور اسسٹنٹ کمشنر کہروڑ پکا سے ٹیلیفون پر رابطہ کر کے دھنوٹ سیوریج کی گھمبیر صورت حال کے بارے میں بتایا اوراان سے درخواست کی کہ سینٹری ورکر انتہائی غریب لوگ ہیں۔ ان ملازمین کی تنخواہوں کے اجراء کیلئے خصوصی توجہ دی جائے۔جبکہ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ٹاؤن کمیٹی کا درجہ دیتے وقت دھنوٹ ٹاؤن کمیٹی ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگی منصوبہ میں ڈالی ہی نہیں گئی تھی۔

ہڑتال

مزید :

ملتان صفحہ آخر -