فوڈ اتھارٹی کی کارروائیاں‘ 4پوائنٹس سیل‘ 283لیٹر دودھ تلف

  فوڈ اتھارٹی کی کارروائیاں‘ 4پوائنٹس سیل‘ 283لیٹر دودھ تلف

  

ملتان ( خصو صی رپورٹر  ) ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی عرفان نواز میمن کی جاری کردہ ہدایات پر عمل کرتے ہوئے فوڈ سیفٹی ٹیموں نے جنوبی پنجاب میں کاروائیاں کرتے ہو? ناقابل سراغ اجزاء سے مصنوعات تیار کرنے,مشروبات کی تیاری میں مصنوعی مٹھاس کا استعمال کرنے,برف کے بلاکس میں حشرات موجود ہونے,غیرمعیاری دیسی گھی فروخت کرنے پر02فوڈفیکٹریاں, آئس فیکٹری اورکریانہ سٹور کو سربمہرکیا۔اسی طرح ملک شاپس سمیت بہاولنگر میں (بقیہ نمبر33صفحہ6پر)

ناکہ بندی کے دوران دودھ بردار گاڑیوں میں موجود1228لیٹر دودھ کی چیکنگ کی گئی۔283لیٹر ملاوٹی،ناقص دودھ تلف کردیا گیا۔اس کے علاوہ ملتان، بہاولپور اور ڈیرہ غازی خان کے مختلف اضلاع میں کاروائیاں کرتے ہوئے کورونا وائرس کے متعلق احتیاطی تدابیر پر عمل درآمد کیلئے دوکانوں میں خوراک کو صحت بخش بنانے کیلئے بروشرز تقسیم کیے۔ جنوبی پنجاب بھر میں 227فوڈ پوائنٹس کو وباء سے متعلق ضروری ہدایات جاری کی گئی اورصفائی کی صورتحال بہتر نہ ہونے پر 196فوڈیونٹس کو اصلاحی نوٹسز جاری کیے۔اسی طرح حفظان صحت کے اصولوں کی خلاف ورزی کرنے پر 35فوڈ پوائنٹس کو 101,000روپے کے جرمانے عائد کیے گئے۔دوران کاروائی16,135مینگوسلائسزبرآمد کی گئیں,131کلو مصالحہ جات,28کلوزائدالمعیاد خوراک,30کلوغیرمعیاری مٹھائی اور دیگر مضرصحت خوراک موقع پر تلف کی گئی۔ تفصیلات کے مطابق کارونا وائرس کے پیش نظر مکمل احتیاط برتنے،خوراک کو محفوظ رکھنے اورشاپس پر کام کرنیوالے ورکرز کو خطرناک وباء سے بچنے کیلئے ہدایاتی پرچے جاری کیے گئیں۔ ماہ رمضان میں خوراک کی فراہمی کے ساتھ ساتھ غذا کو محفوظ رکھنا بہت ضروری ہے۔فوڈ سیفٹی ٹیمز نے پورے جنوبی پنجاب میں کاروائیاں کرتے ہوئے ملتان میں واقع فرینڈفوڈپروڈکٹ کو نامناسب لیبلنگ کرنے,تیارمصنوعات کی تجزیہ رپورٹ نہ ہونے,ناقابل سراغ اجزاء سے جوس تیار کرنے,صاف پانی کا استعمال نہ کرنے,حشرات کی روک تھام کا انتظام نہ کرنے پرفوڈفیکٹری کوسربمہرکیاگیا۔اسی طرح بہاولنگر میں واقع آئیڈیل فوڈزمینگوفلیورڈرنک یونٹ کو مصنوعی مٹھاس کا استعال کرنے,صاف پانی کا استعمال نہ کرنے,فوڈ لائسنس نہ ہونیڈرنک فلیور یونٹ کوسربمہر کیا گیا۔مزیدبہاولنگر میں اسامہ کریانہ سٹور کو غیر معیاری دیسی گھی فروخت کرنے,کھلے مصالحے فروخت کرنے,سٹور میں غیرضروری اشیاء موجود ہونے پر کریانہ سٹور کو سیل کیا گیا۔جبکہ لیہ میں چوہدری آئس فیکٹری کو دی گئی ہدایات پر عمل نہ کرنے,زنگ آلود برتنوں کا استعمال کرنے,برف میں حشرات موجود ہونے اور ورکرز کے میڈیکل سرٹیفکیٹ نہ ہونے پرآئس فیکٹری کو سربمہر کیا گیا۔ اس کے علاوہ ملک شاپس سمیت بہاولنگر میں ناکہ بندی کے دوران دودھ بردار گاڑیوں میں موجود 1228لیٹر دودھ کی چیکنگ کی گئی۔دوران چیکنگ06دودھ بردار گاڑیوں میں موجود دودھ کے سیمپل پاس جبکہ 02گاڑیوں میں موجود دودھ کے موقع پرلیے گئیٹیسٹ فیل ہونے پر170لیٹر دودھ،ملتان میں ملک شاپس میں موجود95لیٹر،وہاڑی میں ملک شاپس میں موجود15لیٹراور خانیوال میں 03لیٹر دودھ کو موقع پر تلف کردیا گیا۔مزید برآں جنوبی پنجاب کے مختلف اضلاع میں کاروائی کرتے ہوئے ملتان ڈویڑن میں 107فوڈ پوائنٹس کو وزٹ کیا اور95کو وارننگ نوٹسز جاری کیے۔اسی طرح بہاولپورڈویڑن میں 54 شاپس کی چیکنگ کی گئی اور46فوڈ پوائنٹس کو اصلاحی نوٹسز جاری کیے جبکہ ڈی جی خان ڈویڑن میں 66شاپس کی چیکنگ کرتے ہوئے55 فوڈ پوائنٹس کو معمولی نقائص پر حتمی وارننگ نوٹسز جاری کیے۔چیکنگ کے دوران تمام فوڈ پوائنٹس کوکارونا سے بچاؤ کے لیے مثبت اقدامات اٹھانے اور دوکانوں میں صفائی کی صورتحال کو بہتر بنانے کے لیے ضروری ہدایات دی گئیں۔حفظان صحت کے اصولوں کی خلاف ورزی کرنے پر ملتان ڈویڑن میں 11فوڈپوائنٹس کو 41,000روپے، بہاولپور ڈویڑن میں 06شاپس کو26,000 روپے اور ڈی جی خان ڈویڑن میں 09 فوڈ یونٹس کومجموعی طورپر34,000 روپے کے جرمانے عائد کیے گئے۔اسی طرح دوران کاروائی انسپیکشن کرتے ہوئے مختلف اضلاع سے16,135مینگو سلائسز برآمد کیے گئے،اس کے علاوہ 131کلومصالحے،28کلو ایکسپائرڈخوراک,30کلوغیرمعیاری مٹھائی،283لیٹر 144غیر معیاری جوس کی بوتلوں کو تلف کیا گیا۔فوڈ سیفٹی ٹیموں نے چیکنگ کے دوران ماسک، حفاظتی لباس پہن رکھے تھے، سینٹائزر کے استعمال کو یقینی بنایا گیا۔عوام سے گزارش ہے فوڈ پوائنٹس کو وزٹ کرتے وقت ماسک کا استعمال لازمی کریں۔ عالمی سطح پر بڑھتی ہوئی وباء کو پھیلنے سے روکنے کے لیے دی گئی ضروری ہدایات پر عمل کریں۔

فوڈ اتھارٹی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -