نیب کی خسرو بختیار اور ہاشم بخت کیخلاف اثاثہ انکوائری 3ماہ میں مکمل کرنیکی یقین دہانی

نیب کی خسرو بختیار اور ہاشم بخت کیخلاف اثاثہ انکوائری 3ماہ میں مکمل کرنیکی ...

  

 لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ میں وفاقی وزیر مخدوم خسرو بختیار اورصوبائی وزیر خزانہ مخدوم ہاشم جواں بخت کے اثاثوں کے کیس میں نیب نے دونوں وزراء کے خلاف انکوائری 3 ماہ مکمل کرنے کی یقین دہانی کروادی،مسٹرجسٹس سردار احمد نعیم کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے احسن عابد کی درخواست پر سماعت کی،درخواست گزارکی جانب سے لاہور ہائیکورٹ میں نیب تحقیقات ملتان سے لاہور منتقل کرنے کے خلاف دائر درخواست میں موقف اختیار کیا کہ مخدوم خسرو بختیار اور مخدوم ہاشم جواں بخت دونوں بھائیوں نے آمدنی سے زائد اثاثے بنائے اور انہیں ظاہر نہیں کیا۔نیب ملتان کو ان کے خلاف کارروائی کے لئے درخواست دی، نیب کی جانب سے کارروائی نہ کرنے پر لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کیا، عدالت نے نیب کو قانون کے مطابق زیرالتواء درخواست کا تین ماہ میں فیصلہ کرنے کا حکم دیا، نیب ملتان نے انکوائری اب مزید کارروائی کے لئے نیب لاہور بھجوادی، اب انکوائری کی پیش رفت بارے درخواست گزار کوآگاہ نہیں کیا جارہا،نیب انکوائری ملتان سے لاہور منتقل کرنے کے اقدام کوکالعدم قرار دیا جائے،درخواست میں مزید استدعا کی گئی ہے کہ دونوں بھائیوں کے خلاف ریفرنس دائر کرنے اور نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا حکم بھی دیا جائے،نیب کے سپیشل پراسیکیوٹر سید فیصل بخاری نے عدالت کو بتایا کہ دونوں ارکان اسمبلی کے خلاف تحقیقات کے لئے ریکارڈ اکٹھا کیا ہے،چیئرمین نیب کا استحقاق ہے کہ وہ انکوائری کسی بھی بیورو کو منتقل کر سکتے ہیں۔

نیب یقین دہانی

مزید :

علاقائی -