شریف فیملی اثاثہ جات منجمد کیس،فریقین کے وکلا 3 جون تک بحث کیلئے طلب

  شریف فیملی اثاثہ جات منجمد کیس،فریقین کے وکلا 3 جون تک بحث کیلئے طلب

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت کے جج جواد الحسن نے سابق وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کے خاندان کے اثاثہ جات منجمدکرنے کے کیس میں فریقین کے وکلا ء کو 3جون تک بحث کے لئے طلب کرلیاہے۔میاں شہباز شریف فیملیز کے اثاثہ جات منجمد کرنے کے خلاف دائر درخواست کی سماعت شروع ہوئی تو میاں شہباز شریف کے وکلا ء نے موقف اختیار کیا کہ نیب حکام نے حقائق کے برعکس درخواست گزار کی فیملیز کے اثاثہ جات منجمدکررکھے ہیں، انوسٹی گیشن کے دوران اثاثے منجمد نہیں کئے جاسکتے، نیب نے تفتیش مکمل کئے بغیر اثاثہ جات منجمدکئے ہیں جو غیر آئینی اقدام ہے درخواست میں استدعا کی گی ہے کہ شہباز شریف،ان کے بیٹے سلمان شہباز سمیت دیگر فیملی ممبران کے اثاثے منجمد کرنے کے عدالتی حکم پر نظر ثانی کی جائے،عدالت نے کیس کی مزید سماعت3جون پر ملتوی کرتے ہوئے فریقین کے وکلا ء کو بحث کے لئے طلب کرلیاہے۔

مزید :

علاقائی -