امریکی ریاست میں عدالت نے لاک ڈاﺅن ختم کرنے کا حکم دے دیا، وہ کام ہوگیا جو اب تک نہ ہوا تھا

امریکی ریاست میں عدالت نے لاک ڈاﺅن ختم کرنے کا حکم دے دیا، وہ کام ہوگیا جو اب ...
امریکی ریاست میں عدالت نے لاک ڈاﺅن ختم کرنے کا حکم دے دیا، وہ کام ہوگیا جو اب تک نہ ہوا تھا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی ریاست وسکانسن میں سپریم کورٹ نے اپنی نوعیت کا منفرد فیصلہ سناتے ہوئے لاک ڈاﺅن ختم کرنے کا حکم دے دیا۔ میل آن لائن کے مطابق امریکہ بھر کی طرح وسکانسن کے ڈیموکریٹ گورنر ٹونی ایورز نے بھی لاک ڈاﺅن کے احکامات دے رکھے تھے۔ گزشتہ دنوں انہوں نے لاک ڈاﺅن میں 26مئی تک توسیع کا نیا حکم جاری کیا جس پر کنزرویٹو پارٹی کے لوگ عدالت چلے گئے اور گزشتہ روز عدالت نے ان کے حق میں فیصلہ سناتے ہوئے گورنر ٹونی ایورز کا توسیع کا حکم کالعدم قرار دے دیا۔

رپورٹ کے مطابق سپریم کورٹ کے 7رکنی بنچ نے چار تین کی اکثریت سے یہ فیصلہ سنایا۔عدالت کا کہنا تھا کہ امریکہ کی کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والی ریاست نیویارک میں بھی توسیع 26مئی تک نہیں کی گئی تو پھر وسکانسن میں اس کا کوئی جواز نہیں بنتا۔ سپریم کورٹ کی طرف سے یہ بھی کہا گیا کہ گورنر کو لاک ڈاﺅن میں توسیع سے پہلے کنزرویٹو قانون سازوں کے ساتھ مشاورت کرنی چاہیے تھی جو انہوں نے نہیں کی۔رپورٹ کے مطابق عدالت کی طرف سے لاک ڈاﺅن ختم کرنے کا دنیا میں یہ پہلا فیصلہ ہے۔ یہ فیصلہ آتے ہی وسکانسن کے لوگ سڑکوں پر نکل آئے اورریستورانوں، شراب خانوں اور دیگر مقامات پر لوگوں کا جم غفیر دیکھنے میں آ رہا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -