وہ آدمی جس نے دنیا میں بیٹھے سینکڑوں لوگوں کو برہنہ کردیا

وہ آدمی جس نے دنیا میں بیٹھے سینکڑوں لوگوں کو برہنہ کردیا
وہ آدمی جس نے دنیا میں بیٹھے سینکڑوں لوگوں کو برہنہ کردیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) گروپس کی شکل میں لوگوں کی برہنہ تصاویر بنانے والے امریکی فوٹوگرافر نے لاک ڈاﺅن کے دوران دنیا بھر کے لوگوں کو آن لائن اپنی خدمات مہیا کر دیں۔ میل آن لائن کے مطابق نیویارک کے رہائشی سپینسر ٹیونک نامی اس فوٹوگرافر نے ایک نیا پراجیکٹ شروع کیا ہے جس کا نام اس نے ’سٹے اپارٹ ٹوگیدر‘ (Stay Apart Together)رکھا ہے۔ ایک دوسرے سے دور رہتے ہوئے اکٹھے ہونے کے اس پراجیکٹ میں دنیا بھر سے کوئی بھی مرد یا عورت اپنی برہنہ تصویر بنوا سکتا ہے۔

سپینسر ٹیونک نے اعلان کیا ہے کہ دنیا بھر سے کوئی بھی مرد یا عورت آن لائن برہنہ ہو کر تصویر بنوا سکتا ہے۔ اب تک مختلف ممالک کے سینکڑوں لوگ سپینسرسے اس طرح اپنی برہنہ تصاویر بنوا چکے ہیں۔ یہ لوگ اپنے گھروں میں کیمروں کے سامنے برہنہ ہو کر مختلف پوز بناتے ہیں اور سپینسر اپنے گھر بیٹھا سکرین سے ان کی تصاویر بناتا ہے اور انہیں گروپس کی شکل دے کر اپنے انسٹاگرام اکاﺅنٹ پر پوسٹ کرتا ہے۔ انسٹاگرام کی بندشوں کی وجہ سے اسے لوگوں کی تصاویر کو کچھ دھندلا کرنا پڑتا ہے ورنہ اس کا انسٹاگرام اکاﺅنٹ بند ہو سکتا ہے۔ واضح رہے کہ سپینسر ٹیونک گروپس کی شکل میں لوگوں کی تصاویر بنانے کے حوالے سے دنیا بھر میں شہرت رکھتا ہے۔ ایک بار اس نے میکسیکو سٹی میں ایک ساتھ 18ہزار لوگوں کی تصویر بنائی تھی جو ایک ریکارڈ ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -